کورونا سے بے روزگار لوگوں کو پندرہ ہزار روپے کا بھتہ دے حکومت: رام گوپال یادو

رام گوپال یادو نے کہا کہ کورونا وبا اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے کاروبار بند ہوگئے ہیں جس کے سبب لوگ بے روزگار ہوگئے ہیں، اب لوگ بھکمری کی وجہ سے ڈپریشن میں ہیں اور خودکشی جیسے قدم اٹھا رہے ہیں

رکن راجیہ سبھا رام گوپال یادو
رکن راجیہ سبھا رام گوپال یادو
user

یو این آئی

نئی دہلی: سماجوادی پارٹی کے رام گوپال یادو نے آج راجیہ سبھا میں کہا کہ کووڈ وبا کی وجہ سے ملک بھر میں لاکھوں لوگوں کی نوکری چلی گئی ہے اور ان کی حالت سدھارنے کے لئے حکومت کو انہیں پندرہ ہزار روپے کا بھتہ دینا چاہیے۔

رام گوپال یادو نے وقفہ صفر کے دوران یہ معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا کی وجہ سے ہوئے مکمل لاک ڈاؤن سے چھوٹے بڑے کارخانے اور کاروبار بند ہوگئے ہیں جس سے بڑی تعداد میں لوگ بے روزگار ہوئے ہیں اور بھکمری کی وجہ سے ڈپریشن کی حالت میں پہنچ گئے ہیں، یہ لوگ اب خودکشی جیسے قدم اٹھا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوئیڈا میں 44 لوگوں کی کورونا سے متعلق معاملوں میں موت ہوئی ہے جبکہ 165 نے خودکشی کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ان لوگوں کی حالت بہتر کرنے کے لئے انہیں 15 ہزار روپے کا بھتہ دینا چاہیے۔

کانگریس کے پی اہل پنیا نے خاص طور پر ذکر کرتے ہوئے یہی معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ کورونا کی وجہ سے پیدا ہوئے حالات کے پیش نظر لوگوں کو منریگا کے تحت کام تو ملا، لیکن اب ان کے کام کے 100 دن پورے ہوگئے ہیں اس لئے اسے بڑھایا جانا چاہیے اور انہیں ہر روز 300 روپے کی رقم دی جانی چاہیے۔ ساتھ ہی ایک کنبے سے ایک کے بجائے دو لوگوں کو کام دیا جانا چاہیے۔

کانگریس کی چھایا ورما نے کہا کہ منریگا کے تحت سبھی کو 200 دن کا کام ملنا چاہیے اور مزدوری کی ادائیگی وقت پر کی جانی چاہیے۔ کانگریس کے ہی آنند شرما نے ذہنی طورپر مفلوج لوگوں کی حالت کی طرف ایوان کی توجہ مبذول کرتے ہوئے کہا کہ ان کی حالت بہت خراب ہے اور حکومت کو اس سمت میں قدم اٹھانے چاہیے۔ ذہنی امراض کو انہوں نے میڈیکل بیمے کے دائرے میں لانے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

وائی ایس آئی کانگریس کے وجے سائی ریڈی نے پولاورم پروجیکٹ کے لئے مرکز کی مدد کی رقم جلد جاری کرنے کا مسئلہ اٹھایا ۔ اس پر ایوان میں موجود وزیر خزانہ نرملا سیتارمن نے کہاکہ اس بارے میں کام ہو رہا ہے۔ ٹی آر ایس کے سریش ریڈی نے کرشنا ندی آبی تنازعہ کے حل کے لئے ٹربیونل کی تشکیل کا مطالبہ کیا۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کے سمبھاجی راجے نے مہاراشٹر میں مراٹھا طبقے کو ریزرویشن پر لگی پابندی کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے اس کی بحالی کے لئے ضروری قدم اٹھائے جانے کا مطالبہ کیا۔ کانگریس کے راجیو ساتو اور نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے شرد پوار نے بھی اس کی حمایت کی۔

قومی آواز اب ٹیلیگرام پر پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next