گوا: بی جے پی کے وزیر مائیکل لوبو نے دیا استعفیٰ، کارکنان کو نظر اندز کیے جانے کا لگایا الزام

مائیکل لوبو نے کہا کہ دوسرے حلقوں کے پارٹی کارکنان نے بھی مجھے بتایا ہے کہ پارٹی اتنی بڑی ہو گئی ہے کہ وہ چھوٹے کارکنان کو نہیں دیکھتی۔

مائیکل لوبو، تصویر آئی اے این ایس
مائیکل لوبو، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

پنجی: گوا میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی قیادت والی مخلوط حکومت میں بندرگاہ کے وزیر مائیکل لوبو نے پیر کو اسمبلی انتخابات سے تقریباً ایک ماہ قبل کابینہ اور ایم ایل اے کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ لوبو نے کہا کہ گوا میں بی جے پی اتنی بڑی ہو گئی ہے کہ چھوٹی پارٹی کے کارکنان کو دور کیا جا رہا ہے۔

وزیر کے عہدے سے استعفیٰ دینے کے بعد مائیکل لوبو نے کہا کہ "بی جے پی کے ساتھ یہ بہت اچھا اور طویل سفر رہا ہے۔ بی جے پی کارکان پارٹی سے ناخوش ہیں۔ شاید میں غلط ہوں، میں نے اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے اور اپنے کانوں سے سنا ہے۔" مائیکل لوبو نے کہا کہ "دوسرے حلقوں کے پارٹی کارکنان نے مجھے بتایا ہے کہ پارٹی اتنی بڑی ہو گئی ہے کہ وہ چھوٹے کارکنان کو نہیں دیکھتی۔ ہم زمینی سطح کے کارکن ہیں۔ ہمیں ایسا محسوس ہوتا ہے کہ وہ ہمیں نظر انداز کر رہے ہیں۔"


وزیر کی حیثیت سے استعفیٰ دینے کے فوراً بعد مائیکل لوبو نے بطور ممبر اسمبلی بھی استعفیٰ دے دیا۔ لوبو نے کہا کہ وہ پیر کی سہ پہر یعنی آج پارٹی چھوڑ رہے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے ابھی تک کسی خاص سیاسی جماعت میں شامل ہونے کا ذہن نہیں بنایا ہے۔ کانگریس کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ توقع ہے کہ مائیکل لوبو جلد ہی اپوزیشن پارٹی میں شامل ہو جائیں گے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔