وسطی کشمیر کے چاڈورہ بڈگام میں مسلح تصادم، 2 ملی ٹینٹ ہلاک

تلاشی آپریشن کے دوران علاقہ میں موجود ملی ٹینٹوں نے فورسز اور ایس او جی کی مشترکہ پارٹی پر فائرنگ کی۔ جوابی فائرنگ کے بعد طرفین کے مابین مسلح تصادم ہوا جس میں دو ملی ٹنٹ مارے گئے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سری نگر: وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے گوپالپورہ چاڈورہ میں منگل اور بدھ کی درمیانی شب کو ہونے والے ایک مسلح تصادم میں دو ملی ٹینٹ مارے گئے ہیں۔

کشمیر زون پولس کے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل پر ایک ٹوئٹ میں کہا گیا ’’چاڈورہ میں ہونے والے ایک مسلح تصادم میں دو ملی ٹینٹ مارے گئے۔ مسلح تصادم کے مقام سے اسلحہ و گولہ بارود برآمد کیا گیا۔ مہلوک ملی ٹینٹوں کی شناخت اور وابستگی معلوم کی جارہی ہے۔‘‘

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ گوپالپورہ چاڈورہ میں ملی ٹینٹوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فورسز اور ریاستی پولس کے ایس او جی نے مذکورہ علاقہ میں گذشتہ رات دیر گئے کارڈن اینڈ سرچ آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ تلاشی آپریشن کے دوران علاقہ میں موجود ملی ٹینٹوں نے فورسز اور ایس او جی کی مشترکہ پارٹی پر فائرنگ کی۔ جوابی فائرنگ کے بعد طرفین کے مابین مسلح تصادم چھڑ گیا جس میں دو ملی ٹنٹ مارے گئے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مہلوک ملی ٹینوں کی لاشیں برآمد کرکے شناخت کا عمل شروع کیا گیا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ تصادم کے دوران فورسز کا کوئی نقصان نہیں ہوا۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق مسلح تصادم کے نزدیک احتجاجیوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان جھڑپیں بھڑک اٹھی ہیں۔ انتظامیہ نے احتیاطی طور پر ضلع بڈگام میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کرادی ہیں۔

اس دوران ریاستی پولس کے ایک ترجمان نے بتایا ’’عوام الناس سے ایک بار پھر التماس ہے کہ وہ جھڑپ کی جگہ جانے سے گریز کریں کیونکہ وہاں پر ممکنہ بارودی مواد موجود ہونے کے باعث خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔ لوگوں سے گزارش کی جاتی ہے کہ وہ پولس کے ساتھ اس سلسلے میں تعاون کریں اور جب تک جھڑپ کی جگہ کو صاف کرکے محفوظ قرار نہ دیا جائے تب تک تصادم کی جگہ جانے سے اجتناب کیا جائے۔‘‘