پانچوں انتخابی ریاستوں کو الیکشن کمیشن نے لکھا خط، کورونا ٹیکہ کاری تیز کرنے کی ہدایت

افسران کے حوالے سے ذرائع نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے منی پور ریاست میں ٹیکہ کی پہلی خوراک کے کم فیصد پر بھی فکر کا اظہار کیا ہے اور حکومت سے وہاں ٹیکہ کری مہم تیز کرنے کو کہا ہے۔

الیکشن کمیشن
الیکشن کمیشن
user

قومی آوازبیورو

الیکشن کمیشن آف انڈیا نے ان پانچ ریاستوں کے چیف سکریٹریز کو خط لکھ کر ٹیکہ کری مہم تیز کرنے کو کہا ہے جہاں جلد ہی اسمبلی انتخابات ہونے ہیں۔ ذرائع نے 3 جنوری کو یہ جانکاری دی۔ افسران کے حوالے سے ذرائع نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے منی پور ریاست میں ٹیکے کی پہلی خوراک کے کم فیصد پر بھی فکر کا اظہار کیا ہے۔ ساتھ ہی حکومت سے وہاں ٹیکہ کاری مہم کو تیز کرنے کے لیے کہا ہے۔ پنجاب، اتر پردیش، اتراکھنڈ، گوا اور منی پور میں جلد ہی اسمبلی انتخاب ہونے جا رہے ہیں اور انتخاب کے شیڈول کا اعلان جنوری ماہ میں ہی ہونے کا امکان ہے۔

انتخابی کمیشن کی جانب سے اس سلسلے میں فکر ظاہر کرنے کے بعد مرکزی حکومت نے گزشتہ سال 27 دسمبر کو سبھی انتخابی ریاستوں کو جلد از جلد اہل آبادی کے لیے کووڈ ٹیکہ کاری شروع کرنے کی صلاح دی تھی۔ حکومت نے متعلقہ ریاستوں کو کورونا وائرس کے معاملوں میں تیزی سے اضافہ اور اس کے نئے ویریئنٹ اومیکرون کو روکنے کے لیے ٹیسٹنگ بڑھانے کی بھی صلاح دی ہے۔


مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے 27 دسمبر کو جاری حکم کے تحت پورے ملک میں کووڈ-19 پروٹوکول اور طبی ضابطوں کو 31 جنوری تک بڑھا دیا گیا ہے۔ مرکزی وزارت صحت نے ووٹنگ والی ریاستوں کو کووڈ ضابطوں پر سختی سے عمل کرانے اور کسی خاص علاقے یا مقامات پر معاملے سامنے آنے پر نئے کنٹنمنٹ زون مقرر کرنے کی ہدایت بھی جاری کی ہے۔

سبھی پانچ انتخابی ریاستوں نے 27 دسمبر کو مرکزی وزارت صحت اور ای سی آئی (الیکشن کمیشن آف انڈیا) کے افسران کے ساتھ گزشتہ میٹنگ میں اپنے یہاں ہوئی ٹیکہ کاری اَپ ڈیٹ کی جانکاری دی تھی۔ اس میں اتراکھنڈ اور گوا نے قومی اوسط سے زیادہ پہلی اور دوسری خوراک کے لیے ٹیکہ کاری کوریج کی اطلاع دی۔ اتر پردیش، پنجاب اور منی پور نے بتایا ہے کہ ان کے یہاں کووڈ-19 ٹیکہ کاری کوریج قومی اوسط سے نیچے ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔