قومی

دھونی ورلڈ کپ میں 5 ویں نمبر پر کریں گے بیٹنگ: سچن

سچن نے کہا کہ میری ذاتی رائے ہے کہ دھونی کو پانچویں نمبر پر ہی بلے بازی کرنی چاہیے۔ میں نہیں جانتا کہ ٹیم کا مجموعہ کیا ہے لیکن ہمارے پاس شکھر اور روہت کے طور پر اوپنر ہیں جبکہ وراٹ چوتھے نمبر پر ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

نئی دہلی: ماسٹر بلاسٹر سچن تندولکر نے آئی سی سی ورلڈ کپ میں ہندستانی ٹیم کمبی نیشن سے متعلق کہا ہے کہ ان کے مطابق اگر تجربہ کار وکٹ کیپر بلے باز مہندر سنگھ دھونی پانچویں نمبر پر بلے بازی کرنے اتریں گے تو یہ ٹیم کیلئے فائدہ مند ہو گا۔

سچن نے کہا کہ دھونی کو اپنے آرڈر پانچویں نمبر پر ہی ڈٹے رہنا چاہیے کیونکہ ٹیم کے پاس چوتھے نمبر پر بلے بازی کرنے کے لیے کئی باصلاحیت کھلاڑی موجود ہیں۔ اس سے پہلے ٹیم انڈیا کے نائب کپتان روہت شرما نے کہا تھا کہ وہ چاہتے ہیں کہ دھونی کو آرڈر میں اوپر چوتھے نمبر پر بھیجا جانا چاہیے۔

ہندوستان کی 15 رکنی ٹیم میں امباٹی رائیڈو، رشبھ پنت، وجے شنکر اور وکٹ کیپر دنیش کارتک چوتھے نمبر پر کھیلنے کے دعویدار ہیں جو ٹیم کے لئے سب سے زیادہ موذوں کھلاڑی ہیں۔ سچن نے کہا کہ میری ذاتی رائے ہے کہ دھونی کو پانچویں نمبر پر ہی بلے بازی کرنی چاہیے۔ میں نہیں جانتا کہ ٹیم کا مجموعہ کیا ہے لیکن ہمارے پاس شکھر اور روہت کے طور پر اوپنر ہیں جبکہ وراٹ چوتھے نمبر پر ہیں۔ کوئی دوسرا پانچویں نمبر پر بلے بازی کر سکتا ہے جبکہ دھونی پانچویں نمبر پر اچھے امیدوار ہیں۔ اس کے بعد ہردک پانڈیا جارحانہ کھلاڑی ہیں جو نچلے آرڈر پر اچھے بلے باز ہیں۔

سابق ہندوستانی کھلاڑی نے كرك انفو سے کہا کہ چوتھے آرڈر کو لے کر کافی بحث کی جا چکی ہے، لیکن مجھے یقین ہے کہ اگر آپ کے پاس اچھے بلے باز ہیں تو انہیں کسی بھی آرڈر پر بلے بازی کرنے کے لیے خود کو تیار کرنا چاہیے۔ ہمارے پاس باصلاحیت کھلاڑی ہیں جو ہمارے لیے توقع کے مطابق کھیل سکتے ہیں۔

ہردک پانڈیا کی عالمی کپ میں اہمیت کو لے کر سچن نے کہا کہ آئی پی ایل کی کارکردگی کو دیکھ کر پتہ چلتا ہے کہ وہ کس طرح گیند کے ساتھ عمل کرتے ہیں اور بغیر پرکھے نہیں کھیلتے۔ وہ آپ کے شاٹس کو دیکھتے ہیں اور پھر کھیلتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ وہ مسلسل تال میں کھیل رہے ہیں۔ یہی بات ان کے حق میں کام آئے گی۔ ہردک انگلینڈ میں پورے اعتماد اور توانائی کے ساتھ گئے ہیں اور میدان پر بھی یہ دکھائی دے گا۔

سچن نے کہا کہ ہردک کے لیے یہ بڑا ٹورنامنٹ ہوگا۔ میں امید کرتا ہوں کہ ہم ایک ٹیم کے طور پر آگے بڑھیں اور آخری تک جائیں اور پورے ملک کو خوش ہونے اور جشن منانے کا موقع دیں۔ ٹیم انڈیا میں واحد بائیں ہاتھ کے بلے باز شکھر دھون کو لے کر افسانوی کھلاڑی نے کہا کہ سلامی بلے باز کو جتنا ممکن ہو دیر تک ٹکے رہ کر ٹیم کو اچھا آغاز دلانے پر توجہ دینی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ بائیں ہاتھ کا کھلاڑی ہونا ہمیشہ اچھا ہوتا ہے کیونکہ بولر کو اس حساب سے کرنا پڑتا ہے اور اسے مسلسل یہ ذہن میں رکھنا پڑتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بائیں ہاتھ کے بلے باز کو لیگ اسپنر یا کسی بھی بولر پر مسلسل دباؤ برقرار رکھنے پر توجہ دینا چاہیے۔ شکھر کے لیے ضروری ہوگا کہ وہ جتنا ممکن ہو ٹک کر بیٹنگ کریں۔ ہندوستانی ٹیم 25 مئی کو نیوزی لینڈ اور 28 مئی کو بنگلہ دیش کے خلاف پریکٹس میچ کھیلے گی اور 5 جون کو اہم ٹورنامنٹ میں جنوبی افریقہ کے خلاف مہم شروع کرے گی۔