دہلی میں ڈینگو کا قہر، 2015 کا ریکارڈ ٹوٹا، 5000 سے زائد معاملے درج

دہلی حکومت کی جانب سے کیے جا رہی تمام کوششوں کے باوجود قومی راجدھانی میں ڈینگو اور ملیریا کے مریضوں کی تعداد میں لگاتار اضافہ ہو رہا ہے، ڈینگو کے معاملوں نے تھ 2015 کا ریکارڈ بھی توڑ دیا ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

ہندوستان کی راجدھانی دہلی میں ڈینگو کا قہر دیکھنے کو مل رہا ہے۔ اس بار ڈینگو نے سارے ریکارڈ توڑ دیے ہیں۔ پیر کے روز جاری رپورٹ کے مطابق اس سال دہلی میں ڈینگو کے 5277 معاملے سامنے اائے ہیں۔ علاوہ ازیں ایک ہفتے میں 2569 ڈینگو کے مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ ڈینگو کے اعداد و شمار پر غور کریں تو اس بار قومی راجدھانی میں ڈینگو کا ڈنک فی الحال بے قابو ہوتا نظر آ رہا ہے۔

دہلی حکومت کی جانب سے کی جا رہی تمام کوششوں کے باوجود قومی راجدھانی میں ڈینگو اور ملیریا کے مریضوں کی تعداد میں لگاتار اضافہ ہو رہا ہے۔ ساتھ ہی دہلی میں ڈینگو کے معاملوں کا چھ سال یعنی سال 2015 کا ریکارڈ ٹوٹ گیا ہے۔ گزشتہ کچھ سالوں کے اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تو سال 2016 میں 4431 معاملے، سال 2017 میں 4726 معاملے، سال 2018 میں 2798 معاملے، سال 2019 میں 2036 معاملے اور سال 2020 میں 1072 ڈینگو کے معاملے درج کیے گئے تھے۔


اس سال دہلی میں اب تک مجموعی طور پر ڈینگو کے 5277 معاملے سامنے آئے ہیں اور 9 اموات درج ہوئی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اس موسم میں 13 نومبر تک ڈینگو کے 5277 معاملے سامنے آئے ہیں، جو 2015 کے بعد سب سے زیادہ ہیں۔ جنوبی دہلی میونسپل کاپروریشن کے ذریعہ پیر کو جاری ہفتہ واری رپورٹ کے مطابق میونسپل کارپوریشن کی رپورٹ کے مطابق اس سیزن میں 13 نومبر تک 2077 ڈینگو کے معاملے درج کیے گئے ہیں جو 2015 کے بعد سے ایک سال میں سب سے زیادہ معاملے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔