دہلی پولیس نے رام لیلا کنوینر کے خلاف درج کی ایف آئی آر

شمالی ضلع کے ڈی سی پی ساگر سنگھ کلسی کا کہنا ہے کہ لوکش رام لیلا کے کنوینر نے پولیس کو بھروسہ دلایا تھا کہ وہ کورونا کے سبھی ضابطوں پر عمل کریں گے، لیکن ایسا نہیں ہوا جس کے پیش نظر کیس درج کیا گیا ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

دہلی پولیس نے لوکُش رام لیلا کمیٹی کے خلاف کورونا ضابطوں کی خلاف ورزی کے الزام میں ایف آئی آر درج کی ہے۔ رام لیلا کمیٹی کے خلاف کورونا کے ضابطوں میں ڈھلائی دینے کے لیے کیس درج کیا گیا ہے، کیونکہ اس میں موجود کئی لوگوں اور کنوینرس نے ماسک نہیں پہنے ہوئے تھے اور سماجی دوری پر عمل نہیں کر رہے تھے۔

شمالی دہلی کے کوتوالی پولیس اسٹیشن میں لوکُش رام لیلا کے کنوینرس کے خلاف دفعہ 188 (پابندی والے احکام کی خلاف ورزی) کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے۔ شمالی ضلع کے ڈی سی پی ساگر سنگھ کلسی کا کہنا ہے کہ لوکُش رام لیلا کے کنوینرس نے پولیس کو یقین دلایا تھا کہ وہ کورونا کے سبھی ضابطوں پر عمل کریں گے، لیکن ایسا نہیں ہوا جس کے بعد ہم نے کنوینرس کے خلاف کیس درج کیا ہے۔


لوکُش رام لیلا دہلی کے لال قلعہ کی سب سے بڑی رام لیلا ہے، جسے کووڈ کے مناسب سلوک پر عمل کرنے کی شرط پر تقریباً 400 اشخاص کے ساتھ منعقد کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ اس کے علاوہ کہا گیا تھا کہ سبھی کو ماسک پہننا ضروری ہوگا اور لوگوں کی انٹری و ایگزٹ کے لیے الگ الگ دروازے ہونے چاہئیں۔

دہلی میں کورونا ضابطوں کو لے کر گائیڈلائن جاری کرنے والے دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے راجدھانی میں رام لیلا اور دسہرا کے پروگرام منعقد کرنے کی اجازت کورونا کے ضابطوں پر عمل کرنے کی شرط پر دی ہے۔ گائیڈلائن میں کہا گیا ہے کہ پنڈال میں ناظرین کی تعداد سیٹ کے برابر ہونی چاہیے۔ انٹری اور ایگزٹ گیٹ الگ الگ ہونے چاہئیں۔ کنوینرس کو یہ یقینی کرنا ہوگا کہ لوگوں کی تعداد کل بیٹھنے کی صلاحیت سے زیادہ نہ ہو اور کوئی اسٹال یا میلہ نہیں لگایا جائے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔