دہلی میں آکسیجن کے لئے ہاہاکار، ایک اسپتال میں 20 مریضوں کی موت، ہائی کورٹ میں عرضی پر سماعت

دہلی کے روہنی میں واقع جے پور گولڈن اسپتال میں آکسیجن کی کمی کے سبب 20 مریضوں کی موت واقع ہو گئی۔ اسپتال میں آکسیجن ریفل نہ ہو پانے کی وجہ سے دیر رات گئے یہ سانحہ گزرا۔

آکسیجن کی سطح ظاہر کرنے والا آلہ / آئی اے این ایس
آکسیجن کی سطح ظاہر کرنے والا آلہ / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: دہلی کے روہنی میں واقع جے پور گولڈن اسپتال میں آکسیجن کی کمی کے سبب 20 مریضوں کی دیر رات گئے موت واقع ہو گئی۔ اسپتال کے میڈیکل ڈائریکٹر نے کہا کہ حکومت کی طرف سے اسپتال کے لئے 3.5 میٹرک ٹن آکسیجن الاٹ کی گئی ہے، جس کو کل سے پھر ریفل کیا جانا تھا لیکن دیر رات گئے ریفل نہیں ہوئی۔ جمعہ کی رات محض 1500 لیٹر آکسیجن ہی ریفل ہو پائی اس کے سب آکسیجن کا اسٹاک ختم ہو گیا اور 20 کورونا کے مریضوں نے دم توڑ دیا۔

اسپتال نے بتایا کہ تاحال وہاں کورونا کے 215 مریض داخل ہیں، جنہیں آکسیجن کی ضرورت ہے۔ فوت ہونے والے تمام مریضوں کی حالات انتہائی نازک تھی۔ یہاں آکسیجن کا پریشر کافی کم ہو گیا، جو آکسیجن 5.30 بجے تک پہنچنی تھی وہ یہاں 12 بجے تک پہنچ پائی۔


ادھر، دہلی کے مہاراجہ اگرسین اسپتال کی عرضی پر دہلی ہائی کورٹ میں آج سماعت ہو رہی ہے۔ عدالت نے مرکز سے اپنے منصوبہ کے بارے میں مطلع کرانے کو کہا ہے۔ ساتھ ہی عدالت نے دہلی حکومت سے کہا ہے کہ اسے اپنے یہاں آکسیجن پلانٹ نصب کرنے چاہئیں۔

خیال رہے کہ ہفتہ کی صبح دہلی کے کئی اسپتالوں نے آکسیجن کی کمی کے حوالہ سے ایمرجنسی پیغام جاری کیا ہے۔ روہنی کے ہی ایک دیگر سروج اسپتال نے بھی آکسیجن کی کمی کے سبب ہاتھ کھڑے کر دیئے ہیں۔ اسپتال کی جانب سے مریضوں کو ڈسچارج کیا جا رہا ہے اور نئے مریضوں کے داخلے بند کر دیئے گئے ہیں۔


اسپتال کی جانب سے ایک نوٹس جاری کرکے کہا گیا کہ بہت کوششوں کے بعد بھی ان کو آکسیجن کی فراہمی نہیں ہو پا رہی ہے، جس کی وجہ سے وہ نئے مریضوں کو داخل کرنے سے قاصر ہیں اور سبھی مریضوں کو ڈسچارج کر رہے ہیں۔ اسپتال نے کہا، ’’یہ المناک صورت حال ہے اور اب اس حقیقت کو ہم اپنے تک محدود نہیں رکھ سکتے، ہمارے سسٹم نے ہمیں مایوس کر دیا ہے، ہم بے بس ہیں۔‘‘

سروج اسپتال کی جانب سے بتایا گیا کہ گزشتہ رات انہیں راجیو گاندھی اسپتال سے ٹینکر حاصل ہو گیا تھا لیکن وہ ٹینکر اب ختم ہو گیا ہے۔ آکسیجن سپلائر کمپنی ’آئی این او ایکس‘ نے کل رات آکسیجن لانے کا وعدہ کیا تھا لیکن اب وہ کہہ رہی ہے کہ اس کے پاس آکسیجن موجود نہیں ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔