یاس طوفان: بنگال کے 9 اضلاع میں ہائی الر ٹ، سیلاب کا خطرہ

مشرقی مدنی پور اور جنوبی 24 پرگنہ کے ساحلی علاقے سب سے زیادہ متاثر ہوسکتے ہیں۔ انتظامیہ کو خدشہ ہے کہ یاس طوفان کی وجہ سے ریاست کے 9 اضلاع میں سیلاب کی صورتحال پیدا ہوسکتی ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

کولکاتا: مغربی بنگال حکومت یاس طوفان کی شدت کے بعد ریاست کے 9 اضلاع مدنی پور، مرشدآباد، ہوڑہ، ہگلی اور بردوان کے دواضلاع میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا ہے۔ منگل کی سہ پہر یاس طوفان میں شدت آگئی ہے اس وقت اڑیسہ کے 360 کلومیٹر دور ہے۔ جنوبی 24 پرگنہ اور شمالی 24 پرگنہ کے نشیبی علاقوں سے لاکھوں افراد سے نکال لیا گیا ہے۔ انہیں امدادی کیمپوں میں رکھا گیا ہے۔ کیمپوں میں کورونا کے پروٹوکول کا خاص خیال رکھا جا رہا ہے۔ امدادی کیمپوں میں ماسک اور سینیٹائزر شامل ہیں۔

بنگال میں مشرقی مدنی پور اور جنوبی 24 پرگنہ کے ساحلی علاقے سب سے زیادہ متاثر ہوسکتے ہیں ۔دیگھا میں فوج تعینات کردی گئی ہے۔ انتظامیہ کو خدشہ ہے کہ یاس طوفان کی وجہ سے ریاست کے 9 اضلاع میں سیلاب کی صورتحال پیدا ہوسکتی ہے۔ ضلع انتظامیہ کو اس سے باخبر کر دیا گیا ہے۔ منگل کی صبح سے طوفان یاس کی وجہ سے جنوبی بنگال کے تمام اضلاع میں بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔ صبح سے ہی آسمان پر بادل چھائے ہوئے ہیں۔ رک رک کر بارش ہو رہی ہے۔ کلکتہ میں آج ہلکی بارش ہوئی ہے۔


آئندہ 24 سے 48 گھنٹوں میں کولکاتہ میں تیز اور موسلا دھار بارش کا امکان ہے۔ بارش کی وجہ سے درجہ حرارت میں کمی واقع ہوئی ہے۔ آج صبح تک بارش کی مقدار 34.6 ملی میٹر ہے۔ آج کلکتہ میں کم سے کم درجہ حرارت 25.5 ڈگری سینٹی گریڈ ہے جو معمول سے ایک ڈگری کم ہے۔ نمی زیادہ سے زیادہ 95 فیصد ہے۔ تاہم، یاس کی وجہ سے کولکاتا میں شاید کوئی بڑا نقصان نہیں ہوگا۔ محکمہ موسمیات علی پور نے بتایا کہ کلکتہ اس مرتبہ محفوظ رہ جائے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔