اتر پردیش میں ’کرائم اور کورونا‘ دونوں کنٹرول سے باہر: پرینکا گاندھی

پرینکا گاندھی نے اتر پردیش میں بڑھتے جرائم پر یوگی حکومت کو ایک بار پھر تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اتر پردیش میں جنگل راج پھیلتا جا رہا ہے اور کرائم و کورونا دونوں کنٹرول سے باہر ہے۔

پرینکا گاندھی، تصویر Getty Images
پرینکا گاندھی، تصویر Getty Images
user

تنویر

اتر پردیش میں جرائم کے واقعات کم ہونے کا نام نہیں لے رہے ہیں۔ روزانہ قتل اور اغوا جیسے واردات منظرعام پر آ رہے ہیں اور ان پر کنٹرول پانے میں یو پی انتظامیہ ناکام نظر آ رہی ہے۔ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا اس سلسلے میں کئی بار یوگی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا چکی ہیں، اور آج ایک بار پھر انھوں نے اس تعلق سے اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انھوں نے ریاست میں جرائم کے مسلسل بڑھتے واقعات کے سلسلے میں یوگی حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ جرم کی وارداتوں پر روک لگانے میں وہ ناکام ثابت ہورہی ہے۔

پرینکا گاندھی نے اپنے ایک ٹوئٹ میں بلند شہر واقعہ کا تذکرہ کیا ہے جہاں دھرمیندر چودھری کا 8 دن قبل اغوا ہوا تھا اور ان کی لاش 31 جولائی کو برآمد ہوئی۔ انھوں نے مزید لکھا ہے کہ "کانپور، گورکھپور، بلند شہر۔ ہر واقعہ میں نظامِ قانون کی سستی ہے اور جنگل راج کی علامت موجود ہے۔ پتہ نہیں حکومت کب تک سوئے گی۔"

قابل ذکر ہے کہ پرینکا گاندھی نے گزشتہ 24 جولائی کو بھی ایک ٹوئٹ میں اتر پردیش کے نظامِ قانون کو کٹہرے میں کھڑا کیا تھا۔ انھوں نے ٹوئٹ میں لکھا تھا کہ ”یو پی میں نظامِ قانون دم توڑ چکی ہے۔ عام لوگوں کی جان لے کر اب اس کی منادی کی جا رہی ہے۔ گھر ہو، سڑک ہو، دفتر ہو، کوئی بھی خود کو محفوظ محسوس نہیں کرتا۔“

Published: 1 Aug 2020, 12:58 PM
next