بچوں کا جانی دشمن بن گیا ہے کورونا کا ’برازیلی اسٹرین‘

بچوں کے لیے تین ممالک سے ہندوستان پہنچے وائرس سب سے زیادہ خطرناک ثابت ہو رہے ہیں اور وہ ممالک ہیں برطانیہ، جنوبی افریقہ اور برازیل۔

تصویر ویپن
تصویر ویپن
user

تنویر

ہندوستان میں کورونا انفیکشن کی دوسری لہر کے دوران کچھ نئے اسٹرین سامنے آئے ہیں جس نے ڈاکٹروں اور سائنسدانوں کی فکر میں اضافہ کر دیا ہے۔ ان نئے اسٹرین میں ’برازیلی اسٹرین‘ بھی شامل ہے جس کو لے کر ایک خوف کا عالم دیکھنے کو مل رہا ہے۔ دراصل یہ برازیلی اسٹرین بچوں کے لیے زیادہ خطرناک ثابت ہو رہا ہے۔ میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق ہندوستان میں کورونا کے تین نئے اسٹرین کے بارے میں پتہ چلا ہے جن میں سب سے زیادہ خطرناک برازیل کا وائرس ہے۔ اس برازیلی اسٹرین کو بچوں کا ’جانی دشمن‘ قرار دیا جا رہا ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ بچوں کے لیے تین ممالک سے ہندوستان پہنچے وائرس سب سے زیادہ خطرناک ثابت ہو رہے ہیں اور وہ ممالک ہیں برطانیہ، جنوبی افریقہ اور برازیل۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ برازیل کا وائرس سب سے زیادہ خطرناک ہے جو کہ تقریباً 15 ممالک میں بچوں پر اپنا قہر برپا کر رہا ہے۔ صرف ہندوستان میں ہی تقریباً 80 ہزار بچے کورونا کی زد میں آ چکے ہیں اور کچھ ریاستوں میں تو برازیلی اسٹرین نے بچوں کو موت کی نیند سلا دیا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ برازیلی اسٹرین خصوصی طور پر 8 مہینے سے 5 سال کے بچوں کے لیے زیادہ خطرناک ہے، اس لیے چھوٹے بچوں پر بہت زیادہ توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ برازیلی وائرس کی وجہ سے اب تک سب سے زیادہ بچوں کی موت ہوئی ہے۔ ماہرین کے مطابق کورونا کی پہلی لہر میں جس طرح بزرگوں پر خطرناک اثر دیکھنے کو ملا تھا، اسی طرح کورونا کی دوسری لہر بچوں کے لیے خطرناک معلوم پڑ رہی ہے۔ مہاراشٹر، اتر پردیش، چھتیس گڑھ اور دہلی جیسی ریاستوں میں اس برازیلی وائرس کا بہت زیادہ اثر بچوں پر دیکھنے کو ملا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 19 Apr 2021, 3:11 PM