کورونا بحران: ممبئی میں عام مسافروں کے لیے جلد دستیاب ہوں گی ٹرین خدمات

ادھو ٹھاکرے نے کووڈ-19 ٹاسک فورس سے بات چیت کی اور انھوں نے حکام سے ریلوے کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے اور ہر ایک کے لئے دوبارہ کام شروع کرنے کی منصوبہ بندی کرنے میں پوری احتیاط برتنے کو کہا۔

ممبئی لوکل ٹرین، فائل فوٹو
ممبئی لوکل ٹرین، فائل فوٹو
user

یو این آئی

ممبئی: ریاستی حکومت جلد ہی عام مسافروں کے لئے مضافاتی ٹرینیں دوبارہ کھولنے کے منصوبے پر عمل کرے گی۔ فی الحال لوکل ٹرینیں صرف ان لوگوں کے لیے چلائی جارہی ہیں جو لازمی خدمات میں مصروف ہیں۔ اگر منصوبے کے مطابق سب کچھ ختم ہوجاتا ہے تو، عام شہری اگلے ہفتے سے لوکل ٹرین کا استعمال کرسکتے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق وزیراعلی ادھو ٹھاکرے نے کووڈ-19 ٹاسک فورس سے اس بارے میں بات چیت کی۔ وزیراعلیٰ نے حکام سے ریلوے کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے اور ہر ایک کے لئے دوبارہ کام شروع کرنے کی منصوبہ بندی کرنے میں پوری احتیاط برتنے کو کہا۔ سینٹرل اور مغربی ریلوے نے پہلے کہا ہے کہ اگر ان سے پوچھا گیا تو وہ مختصر اطلاع پر مزید ٹرینیں چلانے کی پوزیشن میں ہیں۔ مزید یہ کہ مقامی ٹرینیں، جو صرف ضروری کارکنوں کو لے جارہی ہیں، اب دو طرح کی نجی فرموں یعنی بجلی کی کمپنیوں اور طیارے کی بحالی اور مرمت کی منظوری دینے والی فرموں کے ملازمین تک رسائی ہوگی۔

دریں اثنا، بمبئی ہائی کورٹ نے اس سے قبل ادھو ٹھاکرے حکومت سے سوال کیا تھا کہ وہ وبائی امراض کے نتیجے میں مضافاتی ٹرین خدمات کو کب تک محدود رکھنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔ عدالت نے کئی درخواستوں کی سماعت کے جواب میں کہا تھا جس میں یہ درخواست کی گئی تھی کہ وکلاء کو شہر میں لوکل ٹرین خدمات استعمال کرنے کی اجازت دی جائے۔ ایسے حالات میں، وبائی امراض کے بیچ لوگوں نے شہر میں احتجاج کیا ہے تاکہ وہ لوکل ٹرین کا استعمال کرتے ہوئے سفر کرسکیں۔ چونکہ شہر میں بسنے والے زیادہ تر لوگوں کے لئے دفاتر دوبارہ شروع ہوچکے ہیں، گزشتہ ہفتے تقریباً 200 آفس جانے والوں نے بوریولی اسٹیشن کے باہر ایک احتجاجی مظاہرہ کیا تھا کیونکہ ٹریفک کے نتیجے میں اسٹیٹ ٹرانسپورٹ کی بسیں وقت پر نہیں پہنچتیں۔ ویرات میں بھی احتجاج ہوا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔