سری نگر میں کورونا کیسز میں اضافے کی وجہ کووڈ پروٹوکول کی خلاف ورزی: ضلع مجسٹریٹ

سری نگر کے ضلع مجسٹریٹ اعجاز اسد کا کہنا ہے کہ ’’جموں وکشمیر میں کل کورونا کیسز میں سے 50 فیصد کیسز سری نگر میں درج ہو رہے ہیں جس سے معلوم ہوتا ہے کہ یہاں کورونا پروٹوکول پر عمل نہیں ہو رہا ہے۔‘‘

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: ضلع مجسٹریٹ سری نگر اعجاز اسد کا کہنا ہے کہ سری نگر میں کورونا کیسز میں اضافہ درج ہونے کی وجہ کورونا پروٹوکال کی خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن علاقوں میں کورونا پروٹوکال کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے ان میں سخت لاک ڈاؤن نافذ کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ جموں وکشمیر کے کل کورونا کیسز میں سے پچاس فیصد کیسز صرف سری نگر میں درج ہو رہے ہیں۔

موصوف ضلع مجسٹریٹ نے ان باتوں کا اظہار پیر کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔ وہ بازاروں میں کورونا پروٹوکال پر ہو رہےعمل در آمد کا جائزہ لے رہے تھے۔ ایس ایس پی سری نگر سندیپ چودھری بھی ان کے ہمراہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ ’ہم نے آج بازاروں کا اچانک معائینہ کیا جن تجارتی مراکز کو کورونا پروٹوکال کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیکھا گیا ان کو موقع پر ہی سیل کر دیا گیا‘۔


اعجاز اسد کا کہنا تھا کہ ’جموں وکشمیر میں کل کورونا کیسز میں سے پچاس فیصد کیسز سری نگر میں درج ہو رہے ہیں جس سے معلوم ہوتا ہے کہ یہاں کورونا پروٹوکال پر عمل نہیں کیا جا رہا ہے‘۔ انھوں نے کہا کہ جن علاقوں میں کورونا پروٹوکال کی خلاف ورزی ہو رہی ہے ان میں آنے والے دنوں میں سخت لاک ڈاؤن نافذ کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی تاکہ باقی علاقوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جاسکے۔

ایس ایس پی سری نگر سندیپ چودھری نے اس موقع پر کہا کہ کورونا پروٹوکال کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے لوگوں سے کورونا پروٹوکال پر سختی سے عمل کرنے کی اپیل کی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔