پنچایت انتخابات میں کانگریس کی جیت، اشوک گہلوت کی ساکھ میں ہوا اضافہ

پنچایت انتخابات میں کانگریس نے بی جے پی کے گڑھ جے پور اور جودھپور ضلع کونسلوں پر قبضہ کر لیا ہے اور سوائی مادھوپور اور دوسہ میں دوبارہ اپنا بورڈ قائم کرنے میں کامیاب رہی۔

راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت/ IANS
راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت/ IANS
user

یو این آئی

جے پور: راجستھان کے چھ اضلاع میں منعقدہ ضلع پریشد اور پنچایت سمیتی کے انتخابات میں کانگریس کی جیت کی وجہ سے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کی ساکھ میں اضافہ ہوا ہے۔ حالانکہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کانگریس سے نتائج میں زیادہ نہیں پچھڑنے اور اپنے حلقہ کی دو پنچایتوں میں ایک پر جیت اور ایک میں برابر رہنے سے بی جے پی کے ریاستی صدر ڈاکٹر ستیش پونیا بھی اپنی انتخابی ساکھ بچانے میں کامیاب رہے، لیکن جودھ پور میں بی جے پی کے ہار جانے سے مرکزی جل شکتی وزیر گجیندر سنگھ اپنی انتخابی ساکھ بچانے میں ناکام رہے۔

ریاست کے جے پور، جودھپور، سوائی مادھوپور، دوسہ، بھرت پور اور سیروہی اضلاع میں منعقد ہونے والے ان انتخابات میں کانگریس نے بی جے پی کے گڑھ جے پور اور جودھپور ضلع کونسلوں پر قبضہ کر لیا ہے اور سوائی مادھوپور اور دوسہ میں دوبارہ اپنا بورڈ قائم کرنے میں کامیاب رہی۔ وزیراعلی کے ساتھ ساتھ اپنے آبائی ضلع جودھپور میں بی جے پی کو شکست دینے سے ان کی انتخابی ساکھ میں اضافہ ہوا ہے۔


اشوک گہلوت کے علاوہ زراعت کے وزیر لال چند کٹاریا کے حلقہ میں جے پور ضلع کے جھونٹواڑہ اور جوبنیر کی دونوں پنچایتوں میں کانگریس نے جیت حاصل کی ہے وہیں صنعت کے وزیر پرسادی لال مینا کے دوسہ ضلع میں ان کے حلقہ لال سوٹ اور رام گڑھ پچوارہ میں کانگریس کی جیت ہونے پر ان کی انتخابی ساکھ میں اضافہ ہوا ہے اور وہ اپنے کام پر کھرے اترے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔