یوپی: ’لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں‘ مہم سے خواتین میں جوش، پرینکا گاندھی نوئیڈا سے کاشی تک کریں گی 6 میراتھن ریلی

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی قیادت میں اتر پردیش میں کانگریس کی ’لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں‘ مہم کو لے کر خوتین اور نوجوان ووٹروں میں زبردست جوش دیکھنے کو مل رہا ہے۔

پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

اتر پردیش اسمبلی انتخاب کا بِگل بجنے سے قبل کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی یوپی میں دھواں دھار ریلیاں کریں گی۔ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی مہم ’لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں‘ کے تحت کانگریس 4 جنوری کو بریلی میں، 5 جنوری کو اعظم گڑھ میں، 6 جنوری کو بنارس میں، 7 جنوری کو کانپور میں، 8 جنوری کو پریاگ راج و نوئیڈا میں میراتھن ریلی کرانے جا رہی ہیں۔ بنارس میں ہونے والی میراتھن سنگھ دوار سے شروع ہو کر رویندر پوری، بھیل پور، کمچھا ہوتے ہوئے سگرا واقع شہید اُدیان پر ختم ہوگی، جس کے بعد فاتح شرکا کو انعام سے نوازا جائے گا۔

غور طلب ہے کہ پرینکا گاندھی اتر پردیش اسمبلی انتخاب میں خواتین کی طاقت پر توجہ مرکوز کر رہی ہیں۔ اس سے پہلے وہ کہہ چکی ہیں کہ کانگریس ذات اور مذہب کی سیاست میں یقین نہیں کرتی اور اپنی مہم میں غیر جانبدار جنڈر پر دھیان رکھا ہے اور خواتین کو 40 فیصد ٹکٹ کا وعدہ کیا ہے۔


پرینکا گاندھی اتر پردیش کے تمام اضلاع میں خواتین کی ریلیوں کو خطاب کرنے والی ہیں۔ اس کے ساتھ ہی سماجوادی پارٹی کے قلعہ مانے جانے والے فیروز آباد میں بھی میراتھن کرنے کی تیاری میں ہیں۔ سبھی علاقوں میں پرینکا گاندھی ’لڑکی ہوں، لڑ سکتی ہوں‘ مہم کو خطاب کریں گی، جو خواتین ووٹروں کے درمیان زور پکڑ رہا ہے اور پارٹی کو لگتا ہے کہ یہ آئندہ یوپی انتخابات میں گیم چینجر ہو سکتا ہے۔

کئی مہینے قبل سے ہی کانگریس پارٹی اتر پردیش اسمبلی انتخاب کی تیاریوں میں ہے۔ 403 سیٹوں والی اس 18ویں اسمبلی کے لیے یہ انتخاب فروری سے اپریل کے درمیان ہو سکتا ہے۔ 17ویں اسمبلی کی مدت کار 15 مئی تک ہے۔ 17ویں اسمبلی کے لیے 403 سیٹوں پر انتخاب 11 فروری سے 8 مارچ 2017 تک 7 مراحل میں ہوئے تھے۔ ان میں تقریباً 61 فیصد ووٹروں نے اپنے حق رئے دہی کا استعمال کیا تھا۔ ان میں 63 فیصد سے زیادہ خواتین تھیں، جب کہ مردوں کا فیصد تقریباً 60 فیصد رہا۔ انتخاب میں بی جے پی نے 312 سیٹیں جیت کر پہلی بار یوپی اسمبلی میں تین چوتھائی اکثریت حاصل کی تھی۔ وہیں اکھلیش یادو کی قیادت میں سماجوادی پارٹی اور کانگریس اتحاد 54 سیٹیں جیت سکا۔ اس کے علاوہ ریاست میں کئی بار وزیر اعلیٰ رہ چکیں مایاوتی کی بی ایس پی (بہوجن سماج پارٹی) 19 سیٹوں پر محدود ہو گئی تھی۔


فی الحال بی جے پی یوگی آدتیہ ناتھ اور وزیر اعظم نریندر مودی کے چہرے کو آگے رکھ کر انتخاب لڑ رہی ہے۔ لیکن کانگریس پارٹی نے اتر پردیش میں ایک نئی طاقت اور جوش کے ساتھ اپنی مہم شروع کی ہے۔ خواتین ووٹروں میں پرینکا گاندھی کو لے کر کافی جوش دیکھا جا رہا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔