لیفٹیننٹ گورنر کے سابق مشیر بصیر احمد خان کی رہائش گاہ پر سی بی آئی کا چھاپہ

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دلّی کی سی بی آئی کی ایک ٹیم نے مقامی پولیس کی ایک ٹیم کے ہمراہ منگل کی صبح بصیر احمد خان کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا۔

سی بی آئی، تصویر آئی این ایس
سی بی آئی، تصویر آئی این ایس
user

یو این آئی

سری نگر: سینٹرل بیورو آف انوسٹی گیشنز (سی بی آئی) نے جعلی بندوق لائسنسسز کیس کے سلسلے میں منگل کی صبح لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے سابق مشیر بصیر احمد خان کی رہائش گاہ واقع بلبل باغ باغات پر چھاپہ مارا۔ بتا دیں کہ بصیر احمد خان کو ایک ہفتہ قبل ہی لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے مشیر کے عہدے سے فارغ کر دیا گیا ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دلّی کی سی بی آئی کی ایک ٹیم نے مقامی پولیس کی ایک ٹیم کے ہمراہ منگل کی صبح بصیر احمد خان کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا۔ انہوں نے کہا کہ یہ چھاپہ جعلی بندوق لائسنسز کیس کے سلسلے میں مارا گیا۔ بصیر خان جموں وکشمیر کے سابق لیفٹیننٹ گورنر گریش چندرا مرمو کے بھی مشیر رہے ہیں اور وہ موجودہ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے بھی مشیر تھے۔


بتایا جاتا ہے کہ سی بی آئی کے اعلیٰ حکام نے مرکزی وزارت داخلہ کو جعلی بندوق لائسنسز کیس میں ان (خان) کا نام شامل ہونے کے بارے میں مطلع کیا ہے جس کے پیش نظر بصیر خان کو مشیر کے عہدے سے فارغ کیا گیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔