پی چدمبرم کے خلاف سی بی آئی کی چھاپہ ماری ’ملا تو کچھ نہیں مگر چھاپہ ماری کا وقت دلچسپ ہے!‘

رندیپ سرجے والا نے ٹوئٹ کیا، ’’پی چدمبرم ایک قوم پرست اور محب وطن ہیں جن کی ملک سے وابستگی شکوک و شبہات سے بالاتر ہے۔‘‘

چھاپہ ماری کرتی سی بی آئی کی ٹیم / آئی اے این ایس
چھاپہ ماری کرتی سی بی آئی کی ٹیم / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: سی بی آئی نے منگل کی صبح سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم اور ان کے بیٹے کارتی چدمبرم کی رہائش گاہوں پر چھاپہ مارا۔ اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے پی چدمبرم نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ایجنسی کو ’’کچھ نہیں ملا اور نہ ہی کچھ ضبط کیا گیا لیکن وقت دلچسپ تھا۔‘‘ انہوں نے کہا کہ "آج صبح، سی بی آئی کی ٹیم نے چنئی میں رہائش گاہ اور دہلی میں میری سرکاری رہائش گاہ کی تلاشی لی۔ ٹیم نے مجھے ایک ایف آئی آر دکھائی جس میں میرا نام بطور ملزم نہیں ہے۔"

قبل ازیں کانگریس نے چدمبرم کا دفاع کیا اور الزام عائد کیا کہ انہیں بدنام کیا جا رہا ہے۔ کانگریس کے جنرل سکریٹری رندیپ سرجے والا نے ٹوئٹ کیا، ’’پی چدمبرم ایک قوم پرست اور محب وطن ہیں جن کی ملک سے وابستگی شکوک و شبہات سے بالاتر ہے۔‘‘


انہوں نے الزام عائد کیا کہ سی بی آئی انہیں بدنام کرنے کے لیے کہانیاں گھڑ رہی ہے۔ انہوں نے کہا، "سی بی آئی کے ذریعہ سابق وزیر داخلہ اور وزیر خزانہ کے خلاف بے تکے الزامات سیاسی گفتگو میں نچلی سطح کی عکاسی کرتے ہیں۔"

چھاپوں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کارتی چدمبرم نے ایجنسی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اب تو انہیں یہ بھی یاد نہیں ہے کہ کتنی بار چھاپے مارے گئے ہیں۔ انہوں نے ٹوئٹ کیا، "مجھے گنتی یاد نہیں ہے کہ کتنی بار چھاپے مارے گئے ہیں؟ یہ ایک ریکارڈ ہونا چاہیے۔"


مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے پی چدمبرم اور ان کے بیٹے کارتی چدمبرم کے 9 مقامات پر چھاپے مارے۔ یہ معاملہ مبینہ طور پر رشوت لے کر چینی ویزوں کے اجرا سے متعلق ہے۔ معلومات کے مطابق وفاقی تحقیقاتی ایجنسی اوڈیشہ، ممبئی، کرناٹک، دہلی اور چنئی میں چھاپے مار رہی ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔