پاکستان کی جیت پر جشن منانے والے میڈیکل طلبا کے خلاف مقدمے درج

پولیس اسٹیشن کرن نگر میں درج ایف آئی آر میں کہا گیا کہ میڈیکل کالج ہوسٹل میں قیام پذیر طلبا کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا جو ٹی-20 عالمی کپ میچ میں پاکستان کی جیت کے بعد چلا رہے تھے ناچ رہے تھے۔

ایف آئی آر، تصویر آئی اے این ایس
ایف آئی آر، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سری نگر: جموں وکشمیر پولیس نے ٹی ٹونٹی عالمی کپ کے میچ میں پاکستان کی بھارت کے خلاف جیت کا جشن منانے کے پاداش میں دو میڈیکل کالجوں کے طلبا کے خلاف مقدمے درج کئے ہیں۔ یہ مقدمے غیر قانونی سرگرمیوں سے متعلق سخت قانون ’یو اے پی اے‘ کی مختلف دفعات کے تحت درج کئے گئے ہیں۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پولیس نے شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ کے ہوسٹل اور گورنمنٹ میڈیکل کالج کرن نگر میں پیش آنے والے واقعات کا نوٹس لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن صورہ اور پولیس اسٹیشن کرن نگر میں مقدمے درج کئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ملوث طلبا کی شناخت کی جا رہی ہے۔


بتا دیں کہ سوشل میڈیا پر کچھ ویڈیوز گردش کر رہی ہیں جن میں مذکورہ جگہوں پر ٹی ٹونٹی میچ میں پاکستان کی بھارت پر جیت حاصل کرنے کے بعد طلبا کو پاکستان کے حق میں نعرہ بازی کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ اس ضمن میں صورہ پولیس اسٹیشن میں درج ایک ایف آئی آر میں کہا گیا کہ24 اور25 اکتوبر کی درمیانی رات پاکستان کی کرکٹ میچ میں بھارت پر جیت حاصل کرنے کے بعد شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ کے ہوسٹل میں رہائش پذیر ایم بی ابی ایس اور دوسری ڈگریاں حاصل کرنے والے طلبا نے نعرہ بازی کی اور پٹاخے پھوڑے۔

ایف آئی آر میں کہا گیا کہ اس ضمن میں یو اے پی اے ایکٹ کے تحت ایک کیس درج کیا گیا۔ پولیس اسٹیشن کرن نگر میں درج ایف آئی آر میں کہا گیا کہ گورنمنٹ میڈیکل کالج ہوسٹل میں قیام پذیر طلبا کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا جو ٹی ٹونٹی عالمی کپ میچ میں پاکستان کی بھارت کے خلاف جیت کے بعد چلا رہے تھے ناچ رہے تھے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔