بی جے پی ہیمنت سورین کی مقبولیت سے خوفزدہ، اسی لیے ایک اور 'سازش' رچ رہی: جے ایم ایم

جھارکھنڈ مکتی مورچہ (جے ایم ایم) نے الزام لگایا کہ بی جے پی وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کی مقبولیت سے خوفزدہ ہے اور اس لیے وہ ان کے خلاف ایک اور سازش رچ رہی ہے

<div class="paragraphs"><p>ہیمنت سورین / آئی اے ای ایس</p></div>

ہیمنت سورین / آئی اے ای ایس

user

قومی آوازبیورو

رانچی: جھارکھنڈ مکتی مورچہ (جے ایم ایم) نے الزام لگایا کہ بی جے پی وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کی مقبولیت سے خوفزدہ ہے اور اس لیے وہ ان کے خلاف ایک اور سازش رچ رہی ہے۔ جے ایم ایم کا رد عمل انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی جانب سے مبینہ زمین گھوٹالہ سے متعلق منی لانڈرنگ کیس میں سورین کو ضمانت دینے کے جھارکھنڈ ہائی کورٹ کے حکم کو چیلنج کرنے کے بعد آیا ہے۔ جے ایم ایم کے ترجمان منوج پانڈے نے کہا کہ ہائی کورٹ نے پایا کہ سورین کے خلاف کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ہے۔

انہوں نے پیر کو کہا کہ ایجنسی نے شاید بی جے پی کی ہدایت پر سپریم کورٹ کا رخ کیا ہے۔ پانڈے نے کہا، ’’بی جے پی ہیمنت سورین کا دوبارہ جھارکھنڈ کا وزیر اعلی بننا ہضم نہیں کر پا رہی ہے۔ سورین کی مقبولیت نے انہیں خوفزدہ کر دیا ہے۔ اس نے اسمبلی انتخابات سے پہلے ایک نئی سازش رچنا شروع کر دی ہے۔‘‘


سورین کو ہائی کورٹ سے ضمانت ملنے کے بعد 28 جون کو جیل سے رہا کیا گیا تھا۔ انہیں 4 جولائی کو وزیر اعلیٰ منتخب کیا گیا اور انہوں نے پیر 5 جولائی کو اسمبلی میں اعتماد کا ووٹ حاصل کیا۔ سورین نے 31 جنوری کو ای ڈی کی طرف سے گرفتار کیے جانے سے کچھ دیر قبل وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ جھارکھنڈ میں اس سال کے آخر میں اسمبلی انتخابات ہونے ہیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔