بی جے پی نے آج راجیہ سبھا میں پارٹی ممبران پارلیمنٹ کی لازمی حاضری کے لیے وہپ جاری کیا

راجیہ سبھا کے بلیٹن میں یہ بھی کہا گیا کہ ایوان اختصاص (نمبر 5) بل 2021 (ایپروپری ایشن بل 2021) پر غور کرے گا اور اسے واپس کرے گا۔

راجیہ سبھا / آئی اے این ایس
راجیہ سبھا / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: حزب اختلاف کی شدید مخالفت کے درمیان منگل کے روز دو اہم بلوں کے منظور ہونے کے بعد بی جے پی نے راجیہ سبھا میں اپنی پارٹی کے اراکین اسمبلی کو ایوان میں موجود رہنے کے لیے وہپ جاری کیا ہے۔ وزیر قانون کرن رجیجو نے کہا کہ انتخابی قوانین (ترمیمی) بل، 2021 عوامی نمائندگی ایکٹ 1950 میں ترمیم کے بل اور عوامی نمائندگی ایکٹ، 1951 کو مدنظر رکھا جانا چاہیے۔

راجیہ سبھا کے بلیٹن میں یہ بھی کہا گیا کہ ایوان اختصاص (نمبر 5) بل 2021 (ایپروپری ایشن بل 2021) پر غور کرے گا اور اسے واپس کرے گا۔ بلیٹن میں کہا گیا ہے کہ وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے لوک سبھا کے ذریعہ منظور کردہ ایک بل پر غور کرنے کی تجویز پیش کی ہے جس میں مالی سال 2021-2022 کے لئے خدمات کے لئے ہندوستان کے متفقہ فنڈ سے کچھ رقم کی ادائیگی اور اختصاص کی اجازت دی گئی ہے۔


اختصاصی بل ایک منی بل ہے اس لیے حکومت اسے منظور کرنا چاہتی ہے۔ خیال رہے کہ لوک سبھا نے پیر کے روز اپوزیشن جماعتوں کے احتجاج کے درمیان 'انتخابی قوانین (ترمیمی) بل، 2021' منظور کر لیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔