بی جے پی نے ہندو دھرم کو ہائی جیک کیا ہے: محبوبہ مفتی

محبوبہ مفتی نے کہا کہ ’میں سمجھتی ہوں کہ حقیقی سناتن دھرم فرقہ پرستی کی تعلیم نہیں دیتا ہے، بی جے پی، جن سنگھ اور آر ایس ایس لوگوں کو فرقہ پرستی کے نام لڑانا چاہتے ہیں‘۔

محبوبہ مفتی، تصویر آئی اے این ایس
محبوبہ مفتی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

جموں: پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کا دعویٰ ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے ہندوتوا اور ہندو دھرم کو ہائی جیک کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فرقہ پرست سیاسی جماعتوں کا موازنہ آئی ایس آئی ایس کے ساتھ کیا جاسکتا ہے یہ دونوں جماعتیں لوگوں کو مذہب کے نام پر مارتی ہیں۔ موصوف صدر نے ان باتوں کا اظہار یہاں پارٹی ہیڈ کوارٹر کے باہر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔

محبوبہ مفتی نے کہا کہ ’میں سمجھتی ہوں کہ حقیقی سناتن دھرم فرقہ پرستی کی تعلیم نہیں دیتا ہے، بی جے پی، جن سنگھ اور آر ایس ایس لوگوں کو فرقہ پرستی کے نام لڑانا چاہتے ہیں‘۔ ان کا کہنا تھا کہ ’ان جماعتوں نے ہندوتوا اور ہندو دھرم کو ہائی جیک کیا ہوا ہے‘۔


محبوبہ مفتی نے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کو لگتا ہے کہ یہی جماعتیں ہندو دھرم اور ہندوتوا ہے لیکن ایسا نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو کچھ بی جے پی اور آر ایس ایس پڑھانا چاہتی ہیں وہ نہ تو ہندتوا ہے اور نہ ہندو دھرم ہے۔

موصوفہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ’فرقہ پرست جماعتوں کا موازنہ آئی ایس آئی ایس کے ساتھ کیا جا سکتا ہے کیونکہ جو جماعتیں ہندو مسلم فساد بھڑکاتی ہوں اور مذہب کے نام پر لنچنگ کرتی ہوں ان کا موازنہ آئی ایس آئی ایس کے ساتھ کیا کسی کے ساتھ بھی کیا جا سکتا ہے، کیونکہ دونوں مذہب کے نام پر لوگوں کو مارتے ہیں‘۔ بتادیں کہ محبوبہ مفتی صوبہ جموں کے چھ روزہ دورہ پر جمعے کی شام جموں پہنچی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔