کیرالہ: وجین حکومت کے لیے بج گئی خطرے کی گھنٹی، مقامی بلدیہ ضمنی انتخاب میں کانگریس کو ملی بڑی کامیابی

کانگریس کی قیادت والی یو ڈی ایف نے کیرالہ کے مقامی بلدیہ ضمنی انتخاب میں بڑی کامیابی حاصل کی ہے، 29 وارڈوں کے لیے ہوئے ضمنی انتخاب کی ووٹنگ میں کانگریس ٹاپ پر پہنچ گئی ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

کانگریس کی قیادت والی یو ڈی ایف نے کیرالہ کے مقامی بلدیہ ضمنی انتخاب میں بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔ 29 وارڈوں کے لیے ہوئے ضمنی انتخاب کی ووٹنگ میں کانگریس ٹاپ پر پہنچ گئی ہے۔ یہ انتخاب بدھ کے روز ہوا تھا جس میں برسراقتدار سی پی ایم کو شکست ملی ہے۔

کانگریس کی قیادت والی یو ڈی ایف نے جہاں 14 سیٹیں جیتی ہیں، وہیں سی پی ایم قیادت والے بایاں محاذ کو 12 سیٹیں حاصل ہوئی ہیں۔ بی جے پی کی قیادت والی این ڈی اے نے 2 اور ایک سیٹ آزاد امیدوار نے جیتی ہیں۔ ریاست کے 14 میں سے 11 اضلاع میں انتخاب ہوئے تھے اور اس شاندار جیت پر فوراً رد عمل ظاہر کرتے ہوئے ریاستی کانگریس صدر کے. سدھاکرن نے کہا کہ یہ لوگوں کے ذریعہ بدعنوان اور غیر مقبول پینارائی وجین حکومت کو ایک پیغام ہے۔


انتخابی نتائج کی بڑی بات یہ ہے کہ یو ڈی ایف نے وہاں سیٹیں جیتی ہیں جو بایاں محاذ کے مضبوط قلعے تصور کیے جا رہے تھے۔ یہ واضح طور پر ظاہر کرتا ہے کہ کیرالہ کے لوگ وجین حکومت سے پریشان ہو چکے ہیں۔ کانگریس کے لیے یہ خوش آئند ہے کیونکہ یو ڈی ایف زمینی سطح پر کام کرنے میں کامیاب دکھائی دے رہا ہے۔

سدھاکرن کا کہنا ہے کہ اب یہ بات ظاہر ہو چکا ہے کہ ہم تب بھی جیتنے میں اہل تھے جب سی پی ایم اور بی جے پی کے درمیان ایک خفیہ گٹھ جوڑ تھا۔ انھوں نے کہا کہ لوگوں نے وجین حکومت کے خلاف ووٹنگ کیوں کی، اس کی بڑی وجہ بدعنوانی، بھائی بھتیجہ واد، مہنگائی اور ان کی حکومت کی عوام مخالف پالیسیاں ہیں۔ یہ لوگوں کے ذریعہ دی گئی بڑی تنبیہ بھی ہو سکتی ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔