بھارت جوڑو نیائے یاترا: ’ہندوستان میں الگ الگ طریقے سے ناانصافی ہو رہی‘، بنگال میں راہل گاندھی کا خطاب

راہل گاندھی نے بھارت جوڑو نیائے یاترا کے دوران عوام سے کہا کہ مغربی بنگال کے ہر شہری کی ذمہ داری ہے کہ وہ آر ایس ایس نظریات کے خلاف متحد ہو کر لڑیں۔

<div class="paragraphs"><p>تصویر سوشل میڈیا</p></div>

تصویر سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی ’بھارت جوڑو نیائے یاترا‘ کو بدھ کے روز بہار اور پھر مغربی بنگال میں عوام نے اپنی بھرپور حمایت دی۔ یاترا کے دوران جگہ جگہ مقامی باشندوں اور دکانداروں نے راہل گاندھی پر پھولوں کی بارش کر ان کا استقبال کیا۔ یاترا کے دوران جس طرح بڑی تعداد میں جمع لوگ اپنے فون سے ویڈیو بنا رہے تھے، اس سے سبھی کا جوش ظاہر ہو رہا تھا۔ یاترا اٹھارہویں دن بدھ کو بہار کے کٹیہار سے شروع ہوئی اور پھر بنگال میں داخل کر مالدہ پہنچی۔

یاترا کے دوران عوام کو خطاب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ آج ہندوستان میں الگ الگ طریقے سے ناانصافی ہو رہی ہے۔ مودی حکومت معاشی ناانصافی، سماجی ناانصافی، خواتین کے خلاف ناانصافی، کسانوں کے خلاف ناانصافی، مزدوروں کے خلاف ناانصافی کر رہی ہے۔ کانگریس سابق صدر نے مزید کہا کہ ’بھارت جوڑو یاترا‘ میں کانگریس نے ’نیائے‘ جوڑا ہے۔ اس لفظ کے پیچھے معاشی انصاف اور سماجی انصاف ہے۔ سماجی انصاف کا اگلا انقلابی قدم ذات پر مبنی مردم شماری ہے۔ اس سے پتہ چلے گا کہ ملک میں او بی سی، دلت، قبائل، اقلیت اور جنرل طبقہ کے کتنے لوگ ہیں اور ان کے پاس کتنی دولت ہے۔ یہ ملک کا ایکسرے ہوگا۔


راہل گاندھی نے اپنی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ آج دو تین ارب پتیوں کو ملک کی پوری پونجی دی جا رہی ہے۔ اس لیے کانگریس چاہتی ہے کہ ملک میں ذات پر مبنی مردم شماری ہو، جس سے غریب اور کمزور لوگوں کو فائدہ ملے۔ کانگریس لیڈر نے ملک کے موجودہ حالات کا بھی تذکرہ کیا اور کہا کہ کوئی بھی ملک بغیر بھائی چارہ کے ترقی نہیں کر سکتا۔ بی جے پی-آر ایس ایس کے لوگ ملک میں نفرت پھیلا رہے ہیں۔ اس لیے کانگریس اور انڈیا اتحاد بی جے پی-آر ایس ایس کے سامنے کھڑے ہیں، ہم انھیں نفرت نہیں پھیلانے دیں گے۔

مغربی بنگال کی عوام کو براہ راست مخاطب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ آج ملک میں نظریات کی جنگ چل رہی ہے۔ میں مغربی بنگال کے ہر شہری سے کہنا چاہتا ہوں کہ آپ لوگ ملک کو راستہ دکھاتے ہیں، آپ دانشور لوگ ہیں۔ رابندر ناتھ ٹیگور جی، سبھاش چندر بوس جی اور امرتیہ سین جی جیسی شخصیات بنگال سے تعلق رکھتی ہیں۔ ایسے میں آپ کی ذمہ داری بنتی ہے کہ آپ آر ایس ایس کے نفرتی نظریہ کے سامنے متحد ہو کر کھڑے ہو جائیں اس سے جنگ لڑیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;