بھاری بارش کے سبب لکھنؤ کا برا حال، کئی علاقے غرقآب، ضلع مجسٹریٹ کی گھر سے باہر نہیں نکلنے کی ہدایت

لکھنؤ میں ہو رہی موسلادھار بارش سے بی ایس پی سپریمو مایاوتی کی لکھنؤ واقع رہائش میں بھی پانی بھر گیا گیا ہے، وہیں اسمبلی کے باہر سڑکوں پر پانی کا دریا بہہ رہا ہے

تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @ayeshizz
تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @ayeshizz
user

قومی آوازبیورو

لکھنؤ: اتر پردیش کی رجدھانی لکھنؤ میں صبح سے تیز بارش ہو رہی ہے، جس کے سبب شہر کے کئی علاقے غرقآب ہو گئے ہیں۔ ایئرپورٹ آنے جانے والے راستوں پر بھی پانی بھرا ہوا ہے۔ جس کے سبب کئی پروازوں کے روٹ تبدیل کئے گئے ہیں۔ دریں اثنا، ضلع مجسٹریٹ نے ہدایت جاری کرکے کہا ہے کہ لوگ بہت ضرورت ہونے پر ہی گھر سے باہر قدم رکھیں۔

خیال رہے کہ لکھنؤ سمیت ملحقہ کئی اضلاع میں دیر رات سے ہی موسلادھار بارش ہو رہی ہے، جس کی وجہ سے معمولات زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے۔ یہاں تک کے بی ایس پی سپریمو مایاوتی کی لکھنؤ واقع رہائش میں بھی پانی بھر گیا گیا ہے، وہیں اسمبلی کے باہر سڑکوں پر پانی کا دریا بہہ رہا ہے۔


خیال رہے کہ لکھنؤ سمیت ملحقہ کئی اضلاع میں دیر رات سے ہی موسلادھار بارش ہو رہی ہے، جس کی وجہ سے معمولات زندگی مفلوج ہو کر رہے گئے ہیں۔ یہاں تک کے بی ایس پی سپریمو مایاوتی کی لکھنؤ واقع رہائش میں بھی پانی بھر گیا گیا ہے، وہیں اسمبلی کے باہر سڑکوں پر پانی کا دریا بہہ رہا ہے۔

لکھنؤ نرالا نگر میں ایک بڑا درخت اکھڑ گیا اور ایک کار پر جا گرا۔ حالانکہ راحت کی بات یہ رہی کہ اس حادثہ میں کار سوار شخص محفوظ رہا، لیکن درخت کے گر جانے سے راستہ بند ہو گیا اور صبح دفتر جانے والوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔


لکھنؤ کے علاوہ کانپور میں بھی بھاری بارش ہو رہی ہے اور پورے شہر میں پانی ہی پانی نظر آ رہا ہے۔ کانپور کے جوہی پل کے نیچے 3 سے 4 فٹ تک پانی بھر گیا ہے اور آمد و رفت پوری طرح متاثر ہو گئی ہے۔ جوہی پل پر متعدد گاڑیاں پانی بھرنے کی وجہ سے خراب بھی ہو گئی ہیں۔ اس کے علاوہ قومی راجدھانی دہلی اور این سی آر میں بھی صبح سے ہی بارش ہو رہی ہے۔ محکمہ موسمیات نے دہلی این سی آر میں بارش کے پیش نظر آرنج الرٹ جاری کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔