یوپی میں انتخابی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے الیکشن کمیشن کی ٹیم آج لکھنؤ پہنچے گی

کہ اگلے سال مارچ کے دوسرے ہفتے میں اتر پردیش قانون ساز اسمبلی کی مدت پوری ہونے سے پہلے کمیشن نے ریاست میں انتخابات کرانے کی تیاری تیز کر دی ہے۔

سشیل چند، تصویر آئی اے این ایس
سشیل چند، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لکھنؤ: چیف الیکشن کمشنر (سی ای سی) سشیل چندر کی قیادت میں الیکشن کمیشن کا ایک اعلیٰ سطحی وفد اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے تین روزہ دورے پر آج لکھنؤ پہنچے گا۔ قابل ذکر ہے کہ اگلے سال مارچ کے دوسرے ہفتے میں اتر پردیش قانون ساز اسمبلی کی مدت پوری ہونے سے پہلے کمیشن نے ریاست میں انتخابات کرانے کی تیاری تیز کر دی ہے۔ اس کے لیے سی ای سی کی قیادت میں کمیشن کا وفد 28 دسمبر کو مختلف سیاسی پارٹیوں کے رہنماؤں کے ساتھ میٹنگ کے ساتھ ریاست میں انتخابی تیاریوں کا جائزہ شروع کرے گا۔

ذرائع کے مطابق اس اجلاس میں مختلف قومی اور علاقائی پارٹیوں کے رہنما شرکت کریں گے۔ اس کے بعد دیر شام کمیشن کی ٹیم اتر پردیش پولیس، مختلف ایجنسیوں اور مرکزی پولیس فورس کے نوڈل افسران کے ساتھ میٹنگ کرے گی۔ ایسا سمجھا جاتا ہے کہ کورونا انفیکشن کے پھیلاؤ کے خدشات کو مدنظر رکھتے ہوئے انتخابی تیاریوں کے جائزے کے ضمن میں مجوزہ انتخابات کرانے کے لیے تمام ممکنہ متبادل اور اقدامات اٹھائے جائیں گے۔


جائزہ لینے کے لیے کمیشن کی ٹیم 29 دسمبر کو اتر پردیش کے تمام ضلع الیکشن افسران، ضلع سپرنٹنڈنٹ آف پولیس اور انسپکٹر جنرل آف پولیس کے ساتھ اتر پردیش کے تمام دس ڈویژنوں کے ساتھ جائزہ میٹنگ کرے گی۔ جس میں انتخابات کے دوران سیکورٹی انتظامات سمیت دیگر انتظامی پہلوؤں پر بات کی جائے گی۔ اس کے بعد 30 دسمبر کو کمیشن کی ٹیم ریاستی حکومت کے چیف سکریٹری اور ریاست کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس کے ساتھ ایک فیصلہ کن جائزہ میٹنگ کرے گی۔ کمیشن کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ انتخابی عمل سے متعلق تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ انتخابات کی تیاریوں سے متعلق مختلف پہلوؤں پر تین دن تک وسیع غور و خوض کے بعد کمیشن انتخابات کے انعقاد کے لیے ایکشن پلان کو حتمی شکل دے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔