کنگنا کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کیا جائے: کانگریس

گورو ولبھ نے کنگنا رناوت کو ’سرکاری اداکارہ‘ قرار دیا اور کہا کہ انہوں نے بابائے قوم مہاتما گاندھی اور ملک کے شہیدوں کی توہین کی ہے، اس لیے اس کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کیا جانا چاہیے۔

تصویر ٹوئٹر @GouravVallabh
تصویر ٹوئٹر @GouravVallabh
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس نے جمعرات کو اداکارہ کنگنا رناوت پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ اس نے ملک کے شہیدوں کی توہین کی ہے اس لیے اس کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرکے اس سے تمام سرکاری اعزازات واپس لیے جائیں۔ یہاں ایک پریس کانفرنس میں سوالات کا جواب دیتے ہوئے کانگریس کے ترجمان گورو ولبھ نے کنگنا رناوت کو ’سرکاری اداکارہ‘ قرار دیا اور کہا کہ انہوں نے بابائے قوم مہاتما گاندھی اور ملک کے شہیدوں کی توہین کی ہے، اس لیے اس کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کیا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ کنگنا کو مسائل اور حقائق کی بنیادی سمجھ نہیں ہے کیونکہ وہ اسکرپٹ پڑھتی ہیں اور لکڑی کے گھوڑے پر شوٹنگ کرتی ہیں، اس لیے انہیں باپو کی لاٹھی کی طاقت کا احساس نہیں ہوتا اور ان کی تذلیل کرتی ہیں۔ ہندو اور ہندوتوا کے تنازع پر ترجمان نے کہا کہ مہاتما گاندھی ہندو کی علامت ہیں اور ان کے قاتل ناتھو رام گوڈسے ہندوتوا کی علامت ہیں۔


انہوں نے کہا کہ کنگنا لگاتار مہاتما گاندھی پر بیان بازی کر رہی ہیں اور مودی حکومت اور بی جے پی خاموش ہیں، اس کی کیا وجہ ہے؟ کنگنا تو یہ بھی کہہ چکی ہیں کہ ہمیں آزادی 1947 میں نہیں بلکہ 2014 میں حاصل ہوئی ہے۔ کنگنا کو تاریخ کا علم نہیں ہے تو انہیں اس طرح کے تبصروں سے باز رہنا چاہئے۔ گورو ولبھ نے کہا کہ عظیم شخصیات کے بارے میں اتنا کچھ غلط کہنے اور غلط بیان بازی کرنے کے بعد ان پر ملک سے غداری کا مقدمہ درج ہونا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ ملک کے باوقار شہری کو پدم شری اعزاز فراہم کیا جاتا ہے اور جتنے لوگوں کو بھی یہ اعزاز دیئے گئے ہیں، وہ ملک کے بہتر شہریوں اور محب وطن کو دیئے گئے ہیں۔ لہٰذا کنگنا سے یہ اعزاز واپس لیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کنگنا کو یہ سب بیان دینے کے لئے کون کہہ رہا ہے یہ ہر کسی کی سمجھ سے بالاتر ہے لیکن انہیں اب بھی اپنے بیانات پر معافی مانگ لینی چاہئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔