لداخ یونین ٹریٹری میں 4.3 شدت کا زلزلہ، جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں

نیشنل سینٹر فار سیسمولوجی کی ویب سائٹ کے مطابق لداخ میں ہفتے کے روز زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے۔

زلزلہ، تصویر آئی اے این ایس
زلزلہ، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سری نگر: لداخ یونین ٹریٹری میں ہفتے کی صبح زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے تاہم کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ نیشنل سینٹر فار سیسمولوجی کی ویب سائٹ کے مطابق لداخ میں ہفتے کے روز زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے۔

ویب سائٹ کے مطابق ریکٹر اسکیل پر اس زلزلے کی شدت 4.3 ریکارڈ کی گئی، جبکہ اس کی گہرائی 30 کلو میٹر درج ہوئی ہے۔ زلزلے سے کسی قسم کے جانی یا مالی نقصان ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ واضح رہے کہ جموں کشمیر اور لداخ زلزلیاتی پیمانے پر سب سے زیادہ خطرناک پانچ اور چار زون میں آتے ہیں۔


کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور ماہر ارضیات پروفیسر طلعت احمد کا کہنا ہے کہ زون پانچ میں آنے والے علاقوں کو ہمیشہ ایک بڑے زلزلے کے لئے تیار رہنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ 'چھوٹے چھوٹے پیمانے پر آنے والے زلزلے ایک اچھی بات ہے کیونکہ اس سے وقت وقت پر دباؤ کم ہوتا ہے، اس ہم ایک تباہ کن زلزلے سے بچ سکیں گے'۔

قابل ذکر ہے کہ جموں وکشمیر میں 8 اکتوبر 2005 کو ایک قیامت خیز زلزلے کے نتیجے میں ایل او سی کے آرپار زائد از 80 ہزار لوگوں کی موت واقع ہوئی تھی اور بے تحاشہ مالی نقصان ہوا تھا۔ ریکٹر اسیکل پر اس زلزلے کی شدت 7.6 ریکارڈ ہوئی تھی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔