آئی پی ایل 2020: ہم دباؤ میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کرسکے، وراٹ

کوہلی نے کہا کہ ہم نے اس کے بارے میں بات کی اور یہ مشورہ ہوا کہ ہم دائیں اور بائیں ہاتھ کے بلے بازوں کے ساتھ میچ جاری رکھیں گے کیونکہ ان کے دو لیگ اسپنر موجود ہیں۔

تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @IPL
تصویر بشکریہ ٹوئٹر / @IPL
user

یو این آئی

شارجہ: کنگز الیون پنجاب کے خلاف شکست کے بعد رائل چیلنجرز بنگلور کے کپتان وراٹ کوہلی نے کہا ہے کہ ان کی ٹیم دباؤ میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کر سکی۔ کوہلی نے میچ کے بعد چھٹے نمبر پر اے بی ڈی ویلیئرز کو بیٹنگ کے لئے بھیجنے پر وضاحت کی۔ واضح رہے کہ اس میچ میں کنگز الیون پنجاب نے رائل چیلنجرز بنگلور کو 8 وکٹوں سے شکست دی۔ ڈی ویلیئرز سے پہلے شیوم دوبے اور واشنگٹن سندر کو بیٹنگ کے لئے بھیجا گیا تھا۔ دوبے نے 23 گیندوں پر 19 رنز بنائے اور سندر نے 14 گیندوں پر 13 رنز بنائے۔ ڈی ویلیئرز نے 5 گیندوں پر 2 رنز بنائے۔ تاہم تین دن پہلے ڈی ویلیئرز نے 6 نمبر سے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے شارجہ میں 33 گیندوں پر 73 رنز بنائے تھے۔

کوہلی نے کہا کہ ہم نے اس کے بارے میں بات کی اور یہ مشورہ ہوا کہ ہم دائیں اور بائیں ہاتھ کے بلے بازوں کے ساتھ میچ جاری رکھیں گے کیونکہ ان کے دو لیگ اسپنر موجود ہیں۔ لہذا، واشنگٹن سندر کو ترقی دے کر نمبر چار پر بھیج دیا گیا اور شیوم دوبے کو 5 نمبر پر بھیجا گیا۔ انہیں بھی بڑے شاٹس لگانے کے لئے کہا گیا تھا۔

سندر اور دوبے دونوں 33 گیندوں پر 36 رنز بناسکے۔ پنجاب کنگز الیون نے بھی اپنے گیم پلان میں تبدیلی کی اور گلین میکسویل کو بولنگ میں لگا دیا۔ میکس ویل نے 4 اوورز میں 28 رنز دیئے۔ کوہلی نے کہا کہ ڈی ویلیئرس سے پہلے سندر اور دوبے کو بھیجنا ایک آئیڈیا تھا۔ سندر اور دوبے نے بڑے شاٹس کھیلنے کی کوشش کی۔ لیکن انہوں نے عمدہ مظاہرہ کیا۔ کئی بار آپ شاٹ کھیلنے کی کوشش کرتے ہیں لیکن شاٹ کام نہیں کرتا ہے۔ کوہلی نے مزید کہا کہ بعض اوقات آپ کے فیصلے صحیح ثابت نہیں ہوتے ہیں۔ ہم اس فیصلے سے خوش تھے لیکن یہ درست ثابت نہیں ہوا، 170 رنز کا عمدہ ٹوٹل تھا۔

next