آئی پی ایل 2020: آر سی بی کوچ سائمن کیٹچ نے کیا وراٹ کوہلی کا دفاع

رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کے ہیڈ کوچ سائمن کیٹچ نے کہا کہ ہم وراٹ کے ساتھ ان 11 ہفتوں کے کام کے لئے بہت خوش قسمت ہیں۔ وراٹ بہت پیشہ ور ہیں اور یہاں کے تمام کھلاڑی ان کا بہت احترام کرتے ہیں۔

تصویر بشکریہ بی سی سی آئی
تصویر بشکریہ بی سی سی آئی
user

یو این آئی

ابوظہبی: رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کے ہیڈ کوچ سائمن کیٹچ نے مسلسل آٹھ سال تک اپنی کپتانی میں آئی پی ایل کا ٹائٹل نہ جیتنے پر تنقید کا نشانہ بننے والے کپتان وراٹ کوہلی کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ ابھی ٹیم کو ان کی ضرورت ہے۔ جمعہ کو سن رائزرس حیدرآباد سے آئی پی ایل کے ایلیمنیٹر میں چھ وکٹوں سے شکست کے بعد آر سی بی ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا ہے۔ اس شکست کے ساتھ ہی وراٹ کا مسلسل آٹھویں سال اپنی کپتانی میں آئی پی ایل جیتنے کا خواب ٹوٹ گیا ہے اور انہیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ہندوستان کے سابق اوپنر گوتم گمبھیر نے بھی آر سی بی کے ٹورنامنٹ سے باہر ہونے کے بعد کہا ہے کہ اب آر سی بی کو کپتانی کے لئے وراٹ کی جگہ ایک نیا آپشن ڈھونڈنا چاہیے۔ گمبھیر نے کہا کہ آٹھ سال کا وقت بہت لمبا ہوتا ہے اور اگر اس دوران کوئی ٹیم ایک بھی ٹائٹل جیتنے میں ناکام رہی ہے تو اس کے لئے کپتان کو جوابدہ ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وہ وراٹ کے خلاف نہیں ہیں لیکن اب وقت آگیا ہے کہ یہ 32 سالہ کھلاڑی آئی پی ایل میں کپتانی کی ذمہ داری سے دستبردار ہو جائے۔

سائمن کیٹچ نے وراٹ کی قیادت کا دفاع کرتے ہوئے ہفتے کے روز میڈیا سے گفتگو میں اپنی دو اہم خصوصیات کا خاص طور پر تذکرہ کیا۔ کیٹچ کے مطابق پہلی خصوصیت یہ ہے کہ وراٹ کھلاڑیوں کی بہت اچھی طرح رہنمائی کرتے ہیں اور ان کی دوسری خصوصیت یہ ہے کہ وہ نوجوان کھلاڑیوں کو آخر تک جدوجہد کرنے کی ترغیب دیتے ہیں۔ آر سی بی کوچ کا ماننا ہے کہ وراٹ نے اس سیزن سے آئی پی ایل میں قدم رکھنے والے نووارد دیودت پڈیکیل کو بہترین رہنمائی فراہم کی ہے۔ آر سی بی کے بلے باز دیودت نے اس سیزن میں 473 رنز بنائے ہیں، جس میں پانچ نصف سنچریاں شامل ہیں۔ کیٹچ نے کہا کہ ہم وراٹ کے ساتھ ان 11 ہفتوں کے کام کے لئے بہت خوش قسمت ہیں۔ وراٹ بہت پیشہ ور ہیں اور یہاں کے تمام کھلاڑی ان کا بہت احترام کرتے ہیں۔

next