آئی پی ایل 2020: ممبئی انڈینز نہ ہو پریشان، بریٹ لی نے بتایا لست ملنگا کی کمی پوری کرنے والے کھلاڑی کا نام

بریٹ لی نے ایک پروگرام کے دوران کہا کہ ممبئی انڈینز ٹیم میں ملنگا کی جگہ کو یقینی طور پر بمراہ پر کرسکتے ہیں۔ میں اس وقت سے ہی بمراہ کا مداح ہوں جب سے انہوں نے ہندوستانی ٹیم میں کھیلنا شروع کیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: آسٹریلیائی ٹیم کے سابق فاسٹ بالر بریٹ لی نے کہا ہے کہ آئی پی ایل میں ممبئی انڈینز ٹیم کے لئے کھیلنے والے ہندوستانی فاسٹ بالر جسپریت بمراہ ڈیتھ اوورز میں شاندار بالنگ کرتے ہیں اور وہ سری لنکا کے فاسٹ بالر لست ملنگا کی کمی کو پورا کر سکتے ہیں جو اس بار آئی پی ایل میں نہیں کھیل رہے ہیں۔

بریٹ لی نے اسٹار اسپورٹس کے پروگرام گیم پلان میں کہا کہ ممبئی انڈینز ٹیم میں ملنگا کی جگہ کو یقینی طور پر بمراہ پر کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں اس وقت سے ہی بمراہ کا مداح ہوں جب سے انہوں نے ہندوستانی ٹیم میں کھیلنا شروع کیا ہے۔ ان کے پاس بالنگ کا ایک الگ ایکشن ہے جس کی مدد سے گیند بلے باز کے لئے اندر کی طرف آتی ہے۔


آسٹریلیائی کھلاڑی کا کہنا تھا کہ بمراہ دونوں طرف گیند کو سوئنگ کرسکتے ہیں اور وہ نئی گیند سے لاجواب ہیں لیکن مجھے وہ پرانی گیند سے بولنگ کرتے ہوئے اچھے لگتے ہیں۔ اس لئے وہ ملنگا کی جگہ کو بھر سکتے ہیں اور ڈیتھ اوورز میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بمراہ 140 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے بولنگ کرسکتے ہیں اور اس میں یارکرس کرنے کی صلاحیت ہے۔ صرف بہت کم بولر ہی ایسا کر سکتے ہیں۔

سابق فاسٹ بالر نے آخری چار سے متعلق کہا کہ ممبئی انڈینز آخری سیزن کی فاتح ٹیم ہے اور وہ آخری چار میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ممبئی انڈینز کی ٹیم لاجواب ہے اور کیرن پولارڈ بھی زبردست تال میں ہیں۔ سب جانتے ہیں کہ کپتان روہت شرما کیا کرسکتے ہیں۔ ممبئی میں بمراہ، بڑے شاٹ پلیئرز اور بہت سے اچھے اسپنر ہیں لہذا ممبئی یقینی طور پر ان کے مطابق آخری چار میں جگہ کے قابل ہے۔


مہندر سنگھ دھونی کی زیرقیادت چنئی سپر کنگز کے بارے میں لی نے کہا کہ چنئی کی ٹیم فائنل فور میں داخل ہونے کی بھی دعویدار ہے اور انہوں نے فائنل چار کے لئے چنئی کو بھی منتخب کیا ہے کیونکہ ان کے پاس شاندار اسپن اٹیک ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے حالات کو دیکھتے ہوئے، مچل سینٹنر اور رویندر جڈیجا کے لئے سازگار حالات ہیں جن سے وہ فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


/* */