امریکہ میں سکھ کیب ڈرائیور پر حملے کی مذمت، ملزمان کو جلد گرفتار کرنے کی یقین دہانی

نیویارک میں ہندوستانی قونصل خانہ نے امریکی حکام پر زور دیا کہ وہ سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملے کی تحقیقات کریں۔ سفارت خانہ نے ہفتہ کے روز کہا کہ نیویارک میں سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملہ انتہائی پریشان کن ہے۔

تصویر بشکریہ ریڈف
تصویر بشکریہ ریڈف
user

یو این آئی

واشنگٹن: امریکہ نے نیویارک سٹی کے جان ایف کینڈی ہوائی اڈے میں ایک سکھ کیب ڈرائیور پر حملے کی مذمت کی اور ملزم کو جلد گرفتار کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ امریکہ نے اتوار کے روز ایک سکھ ڈرائیور پر حملے کی ویڈیو وائرل ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے جرائم کے مرتکب افراد کو گرفتار کرنا ملک کی ذمہ داری ہے۔

محکمہ خارجہ کے جنوبی اور وسطی ایشیائی امور کے بیورو نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ گزشتہ ہفتے جے ایف کے ہوائی اڈے پر ایک سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملے کی خبروں سے ہم بہت پریشان ہیں۔ یہ ویڈیو پچھلے ہفتے کیمرے میں قید ہوئی تھی۔ ہمارا تنوع امریکہ کو مضبوط بناتا ہے اور ہم اس قسم کے تشدد کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ملک میں جہاں کہیں بھی ایسے جرائم ہو رہے ہوں، تشدد کے مرتکب افراد کو اپنی کارستانیوں کے لیے ذمہ دار ٹھہرائیں۔‘‘


نیویارک میں ہندوستانی قونصل خانہ نے امریکی حکام پر زور دیا کہ وہ سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملے کی تحقیقات کریں۔ سفارت خانہ نے ہفتہ کے روز کہا کہ نیویارک میں سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملہ انتہائی پریشان کن ہے۔ ہم نے یہ معاملہ امریکی حکام کے سامنے اٹھایا ہے اور ان پر زور دیا ہے کہ وہ ایسے پرتشدد واقعے کی تحقیقات کریں۔ واقعے کی ویڈیو میں ایک شخص ایئرپورٹ کے باہر سکھ ٹیکسی ڈرائیور پر حملہ کرتے ہوئے نظر آ رہا ہے۔ حملے کے دوران کیب ڈرائیور کی پگڑی بھی پھاڑ دی گئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔