فرانس: چرچ کے نزدیک چاقو سے حملہ، دو افراد ہلاک

فرانسیسی نشریاتی ادارے یورپ 1 نے خبر دی ہے کہ ایک شخص نے متعدد افراد پر حملہ کر دیا جس میں ایک خاتون سمیت دو افراد ہلاک ہوگئے۔ ابتدائی رپورٹوں میں تین لوگوں کے مرنے کی اطلاع دی گئی تھی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

فرانس کے شہر نیس میں ایک چرچ کے قریب ایک حملہ آور نے چاقو سے حملہ کرکے کم از کم دو افراد کو ہلاک کر دیا۔ فرانسیسی میڈیا نے بتایا کہ جمعرات کی صبح نیس شہر میں ایک حملہ آور نے لوگوں پر چاقو سے حملہ کر دیا جس میں کم از کم دو افراد ہلاک اور متعدد دیگر زخمی ہو گئے۔

خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے مطابق نیس کے میئر کرسٹیان استروسی نے بتایا کہ مشتبہ حملہ آور کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ یہ بظاہر ایک دہشت گردانہ حملہ تھا جو شہر کے نوٹرے ڈیم چرچ کے پاس پیش آیا۔ اتروسی نے ٹوئٹر پر لکھا ”میری نیس کے لوگوں سے اپیل ہے کہ وہ اس علاقے میں آنے سے پرہیز کریں تاکہ پولیس اور ہنگامی خدمات سے وابستہ اہلکار اپنی ذمہ داریاں انجام دے سکیں۔"

فرانسیسی نشریاتی ادارے یورپ 1 نے خبر دی ہے کہ ایک شخص نے متعدد افراد پر حملہ کر دیا جس میں ایک خاتون سمیت دو افراد ہلاک ہوگئے۔ ابتدائی رپورٹوں میں تین شخص کے مرنے کی اطلاع دی گئی تھی۔ فرانسیسی وزیر داخلہ جیرالڈ ڈرامانن نے بتایا کہ پولیس نے علاقے کا محاصرہ کرلیا ہے اور کارروائی شروع کر دی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ وہ جلد ہی ایک ہنگامی میٹنگ کرنے والے ہیں۔ خیال رہے کہ یہ حملہ ایسے وقت پیش آیا ہے جب پیرس میں اس ماہ کے اوائل میں ایک چیچین نزاد شخص کے ہاتھوں ایک فرانسیسی ٹیچرکے قتل کا معاملہ ابھی بھی کافی گرم ہے۔

next