روس کے ویٹو کے بعد سلامتی کونسل کا ’نادر‘ نوعیت کا اجلاس آج

سلامتی کونسل کے اجلاس میں مجوزہ قرار داد کے منظور ہونے کی صورت میں اقوام متحدہ کے ضوابط کے مطابق جنرل اسمبلی کا مطلوبہ اجلاس 24 گھنٹے کے اندر منعقد کیا جانا چاہیے۔

تصویر العربیہ ڈاٹ نیٹ
تصویر العربیہ ڈاٹ نیٹ
user

قومی آوازبیورو

روس کی جانب سے بطور مستقل رکن ویٹو پاور استعمال کرنے کے سبب قرار داد کے اجرا میں ناکامی کے بعد سلامتی کونسل آج اتوار کے روز ایک اجلاس منعقد کر رہا ہے۔ اجلاس کا مقصد ایک قرار داد منظور کرنا ہے جس میں کل پیر کے روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا خصوصی اجلاس منعقد کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا۔ یہ اجلاس روس اور یوکرین کے درمیان تنازع کے لیے مختص ہو گا۔ یہ بات سفارتی ذرائع نے بتائی ہے۔

واضح رہے کہ اس صورت حال میں سلامتی کونسل کے پانچ مستقل ارکان میں سے کوئی بھی ملک ویٹو پاور کا سہارا نہیں لے سکتا! جنرل اسمبلی کے اس غیر معمولی اجلاس کا مقصد اقوام متحدہ کے 193 رکن ممالک کی جانب سے روس-یوکرین تنازع، اقوام متحدہ کے منشور کی خلاف ورزی، بالخصوص جنگ کی مذمت کے حوالے سے موقف سامنے لانا ہے۔ یہ بات ایک سفارت کار نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کو بتائی۔


روس اور یوکرین کے تنازع کے حوالے پیر کے بعد سے یہ سلامتی کونسل کا چوتھا اجلاس ہو گا۔ سلامتی کونسل کے اجلاس میں مجوزہ قرار داد کے منظور ہونے کی صورت میں اقوام متحدہ کے ضوابط کے مطابق جنرل اسمبلی کا مطلوبہ اجلاس 24 گھنٹے کے اندر منعقد کیا جانا چاہیے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;