سنامی کی طرح بڑھ رہے ہیں ڈیلٹا اور اومیکرون کے کیسز: عالمی ادارۂ صحت

ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل نے ایک بیان میں کہا کہ کورونا کی ان دو شکلوں کے دوہرے خطرے کے باعث کیسز کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے، اسپتالوں میں مریضوں اور اموات کی تعداد میں دوبارہ اضافہ ہو گا۔

اومیکرون، تصویر آئی اے این ایس
اومیکرون، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

جنیوا: ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس گیبریسس نے کووڈ-19 کے اومیکرون اور ڈیلٹا ویرینٹس کو دوہرا خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کے کیسز سونامی کی طرح بڑھ رہے ہیں۔ ٹیڈروس گیبریس نے بدھ کے روز ایک بیان میں کہا کہ کورونا کی ان دو شکلوں کے دوہرے خطرے کے باعث کیسز کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے اور اسپتالوں میں مریضوں اور اموات کی تعداد میں دوبارہ اضافہ ہو گا۔

گیبریسس نے کہا کہ "مجھے گہری تشویش ہے کہ ڈیلٹا کی طرح اومیکرون بھی انتہائی متعدی ہے۔ اس وائرس کے کیسز تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ یہ وائرس اس تیزی سے پھیل رہا ہے کہ ویکسینیشن کے علاوہ صحت کے رہنما اصولوں کو اپنانا بھی بہت ضروری ہو گیا ہے تاکہ وائرس کے کیسز کو کم کیا جا سکے۔


ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل نے فارماسیوٹیکل کمپنیوں اور ترقی یافتہ ممالک کے رہنماؤں پر زور دیا ہے کہ وہ کورونا کے الفا، بیٹا، گاما، ڈیلٹا اور اومیکرون کی مختلف اقسام سے سبق حاصل کریں اور 70 فیصد آبادی کو ویکسین دینے کا ہدف مقرر کرنے کی اپیل کی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔