افغانستان میں انسانی بحران کو کم کرنے کے لیے متحد ہونے کی اپیل

نیڈ پرائس نے کہا کہ ’’وزیر خارجہ انٹونی بلنکن اور جرمن وزیر خارجہ ہیکو ماس نے اتحادیوں اور شراکت داروں کے ساتھ افغانستان کے بارے میں وزارتی اجلاس کی میزبانی کی‘‘۔

انٹونی بلنکن، تصویر آئی اے این ایس
انٹونی بلنکن، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

واشنگٹن: امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے اتحادیوں اور شراکت داروں سے اپیل کی ہے کہ وہ افغانستان میں انسانی بحران کو کم کرنے اور دہشت گردی کے خلاف طالبان کو جوابدہ ٹھہرانے کی کوشش میں متحد ہوں۔ محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے اپنے بیان میں یہ اطلاع دی۔

نیڈ پرائس نے کہا کہ ’’وزیر خارجہ انٹونی بلنکن اور جرمن وزیر خارجہ ہیکو ماس نے اتحادیوں اور شراکت داروں کے ساتھ افغانستان کے بارے میں وزارتی اجلاس کی میزبانی کی‘‘۔ انٹونی بلنکن نے افغانستان کے انسانی بحران کے حل اور شدت پسندی سے نمٹنے کے لئے طالبان کو جوابدہ ٹھہرانے اور افغانوں اور غیر ملکی شہریوں کے لیے محفوظ راستے کی اجازت دینے اور بنیادی حقوق کا احترام کرنے والی شمولیاتی حکومت بنانے پر متحد ہونے کی اپیل کی۔


بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ خواتین اور لڑکیوں سمیت افغان لوگوں کے انسانی حقوق کی حمایت جاری رکھے گا اور اس بات کو یقینی بنائے گا کہ ملک دہشت گردی کی محفوظ پناہ گاہ نہ بنے۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کی خوراک اور زراعت کی تنظیم نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ انسانی امداد وقت پر دستیاب نہیں ہوئی ہے تو آنے والے موسم سرما میں ان سینکڑوں ہزار افغانوں کو خطرہ لاحق ہو جائے گا جن کی روزی کا انحصار زراعت پر منحصر ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔