پچاس فیصد امریکی شہریوں نے بائیڈن کے کام کو صحیح مانا

سروے کے دوران 62 فیصد لوگوں نے مانا کہ جو بائیڈن نے کورونا وائرس (کووڈ- 19) سے نمٹنے کے لئے اچھا کام کیا ہے، جبکہ 31 فیصد لوگوں نے اس سلسلے میں ان کی پالیسیوں کی مخالفت کی تھی۔

جو بائیڈن، تصویر آئی اے این ایس
جو بائیڈن، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

واشنگٹن: امریکہ کے پچاس فیصد شہریوں نے صدر کی حیثیت سے جو بائیڈن کے کام کو صحیح مانا ہے۔ واشنگٹن پوسٹ میں اتوار کے روز شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں یہ اطلاع دی۔ اے بی سی نیوز اور واشنگٹن پوسٹ کے ذریعہ کرائے گئے سروے میں 42 فیصد لوگوں نے بائیڈن کے کام کے تعلق سے ناراضگی ظاہر کی، جبکہ آٹھ فیصد لوگوں نے کوئی رائے ظاہر نہیں کی۔

سروے کے دوران 62 فیصد لوگوں نے مانا کہ جو بائیڈن نے کورونا وائرس (کووڈ- 19) سے نمٹنے کے لئے اچھا کام کیا ہے، جبکہ 31 فیصد لوگوں نے اس سلسلے میں ان کی پالیسیوں کی مخالفت کی تھی اور سات فیصد لوگوں نے کوئی رائے ظاہر نہیں کی تھی۔


وہیں جرائم اورامریکہ- میکسیکو سرحد پرمہاجرین کے تعلق سے جو بائیڈن کی پالیسیوں سے زیادہ تر لوگ متفق نہیں تھے۔ اس معاملے میں بالترتیب 48 فیصد اور 51 فیصد لوگوں نے بائیڈن کے حق میں ووٹ دیا۔ وہیں 33 فیصد لوگوں نے کہا کہ امریکی صدر کی کوششوں کے باوجود سرحد پر دراندازی کی کوشش کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، جبکہ 38 فیصد نے جو بائیڈن کے جرم سے نمٹنے کے طریقوں کو صحیح مانا ہے۔

اے بی سی نیوز اور واشنگٹن پوسٹ نے یہ سروے 27 جون سے 30 جون کے درمیان ٹیلیفونک انٹرویوز کے ذریعے کیا اور اس میں 18 سال سے زیادہ عمر کے 907 افراد کو شامل کیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔