’ہر ہر شمبھو‘ گا کر تنازعہ کا شکار ہوئی فرمانی ناز کا نیا نغمہ ’ہر گھر ترنگا‘ منظر عام پر

فرمانی کے نئے نغمہ پر لوگوں کا مثبت رد عمل نظر آ رہا ہے، ایک سوشل میڈیا صارف نے لکھا ہے ’’موسیقی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا‘‘، تو دوسرے نے لکھا ’’دل خوش ہو گیا نغمہ سن کر۔ فرمانی اور پوری ٹیم کو سلام۔‘‘

فرمانی ناز کی فائل تصویر
فرمانی ناز کی فائل تصویر
user

قومی آوازبیورو

اتر پردیش کی مشہور اور متنازعہ گلوکارہ فرمانی ناز ایک بار پھر سرخیوں میں ہیں۔ ’ہر ہر شمبھو‘ بھجن گا کر تنازعہ کا شکار ہونے والی اور خوب سرخیاں بٹورنے والی فرمانی ناز نے اپنے نئے نغمہ ’ہر گھر ترنگا‘ کو ریلیز کیا ہے۔ اس نغمے میں انھوں نے ہندو-مسلم اتحاد پر زور دیا ہے اور ملک کی ترقی و خوشحالی کا پیغام دیا ہے۔ 15 اگست کے پیش نظر مرکزی حکومت نے’ہر گھر ترنگا‘ مہم شروع کی ہے اور فرمانی ناز کا نیا نغمہ اس مہم کو رفتار دینے والا ثابت ہوگا۔ اس نغمہ میں وہ لوگوں سے ہر گھر پر ترنگا لہرانے کی اپیل کر رہی ہیں اور خود ترنگے کا دوپٹہ اور پگڑی باندھے ہوئی نظر آ رہی ہیں۔

فرمانی ناز کا تازہ نغمہ ریلیز کے ساتھ ہی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگا ہے۔ گانے کو فرمانی ناز اور فرمان ناز نے آواز دی ہے۔ نغمہ نگاری انوج ملہیڑا کی ہے اور موسیقی دی ہے پروندر سنگھ نے۔ حب الوطنی کے جذبہ سے سرشار کرنے والے اس نغمہ میں فرمانی ناز نے ہندو-مسلم بھائی چارے اور اتحاد کا پیغام دیا ہے۔ انھوں نے نغمہ کے ذریعہ لوگوں سے کہا ہے کہ ’نفرت کو ہم دور کریں گے، پیار دلوں میں اتنا بھریں گے، پیغام ہم لائیں گے، ہم سب کو سنائیں گے، گھر گھر لہرائیں گے، ترنگا پیارا، یہ دیش ہمارا ہے جان سے پیارا‘۔ فرمانی کا یہ پیغام اس لیے بھی خاص ہے کیونکہ گزشتہ دنوں انھوں نے شیو بھوجن گایا تھا جس پر خوب ہنگامہ ہوا۔ اس نغمہ میں فرمانی ناز نے ملک کو صاف، نشہ سے پاک بنانے کی اپیل بھی لوگوں سے کی۔


فرمانی کے اس نغمہ پر لوگوں کا مثبت رد عمل دکھائی دے رہا ہے۔ ایک سوشل میڈیا صارف نے لکھا ہے ’’موسیقی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا‘‘، تو دوسرے نے لکھا ’’دل خوش ہو گیا نغمہ سن کر۔ فرمانی ناز اور ان کی پوری ٹیم کو سلام۔‘‘ اسی طرح ایک دیگر سوشل میڈیا صارف نے لکھا ہے ’’ملک کی آواز... فرمانی ناز...!! فخر ہے ہمیں ہم ہندوستانی ہیں!‘‘

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔