انگلینڈ کے آل راؤنڈر معین علی نے ٹیسٹ کرکٹ سے سبکدوشی کا کیا اعلان

معین علی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’میں ابھی 34 سال کا ہوں اور میں جتنا ہو سکے کھیلنا چاہتا ہوں، اور صرف اپنے کرکٹ سے لطف اندوز ہونا چاہتا ہوں۔‘‘

معین علی، تصویر آئی اے این ایس
معین علی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

ابوظہبی: انگلینڈ کے آل راؤنڈر معین علی نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی ہے۔ تاہم وہ وائٹ بال کرکٹ میں قومی ٹیم کے لیے کھیلتے رہیں گے۔ انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) نے پیر کو اس کی تصدیق کی ہے۔ معین نے ایک بیان میں کہا کہ ’’میں ابھی 34 سال کا ہوں اور میں جتنا ہو سکے کھیلنا چاہتا ہوں اور صرف اپنے کرکٹ سے لطف اندوز ہونا چاہتا ہوں۔ ٹیسٹ کرکٹ شاندار ہے، جب آپ کا دن اچھا ہوتا ہے تو یہ کسی بھی دوسرے فارمیٹ سے بہتر ہوتا ہے، یہ زیادہ فائدہ مند ہوتا ہے اور آپ کو لگتا ہے کہ آپ نے واقعی یہ حاصل کیا ہے۔"

34 سالہ آل راؤنڈر نے کہا کہ "میں اپنے ساتھیوں اور اس جوش کے ساتھ دنیا کی بہترین ٹیموں کے خلاف ٹیسٹ کرکٹ کھیلنے کو یاد کروں گا۔ یہ جانتے ہوئے کہ میں اپنی بہترین گیند سے کسی کو بھی آؤٹ کر سکتا تھا، گیندبازی کے نظریے سے بھی ٹیسٹ کو یاد کروں گا۔ میں نے ٹیسٹ کرکٹ کا لطف اٹھایا ہے، لیکن وہ شدت بعض اوقات بہت زیادہ ہو سکتی ہے اور مجھے لگتا ہے کہ میں نے ٹیسٹ میں جو حاصل کیا ہے اس سے خوش اور مطمئن ہوں۔”


قابل ذکر ہے کہ برسوں سے ٹیسٹ میں انگلینڈ کے اہم اسپن متبادل کے طور پر نہ کھیلنے والے معین نے 2014 میں لارڈس میں سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ کرکٹ میں ڈیبیو کیا تھا۔ اپنے دوسرے ٹیسٹ میں گرچہ انہوں نے سنچری بنائی ہو، لیکن معین نے اپنا ٹیسٹ کیریئر 28.29 کی بیٹنگ اوسط سے ختم کیا ہے۔ 2016 ان کے لیے ایک یادگار سال ثابت ہوا تھا، جس میں انہوں نے اپنے نام مزید چار سنچریاں شامل کیں۔

اگر چہ اس کے بعد وہ سنچری نہیں بنا پائے، لیکن وہ گیند کے ساتھ بہتر رہے۔ انہوں نے 2017 میں ہوم ٹیسٹ سیریز میں جنوبی افریقہ کے خلاف ہیٹ ٹرک لی اور پوری سیریز میں 25 وکٹ لینے پر انہیں پلیئرآف دی سیریزقرار دیا گیا۔ 2019 میں انہیں انگلینڈ کے لیے سینٹرل کنٹریکٹڈ ٹیسٹ کھلاڑیوں کی فہرست سے نکال دیا گیا، جس کے بعد انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ سے بریک لے لیا۔ معین نے 64 ٹیسٹ میچوں میں 2914 رنز اور 195 وکٹیں حاصل کی ہیں، حالانکہ وہ اس فارمیٹ میں 3 ہزار رنز اور 200 وکٹ لینے کی حصولیابی حاصل کرنے والے اوورآل 15 ویں کھلاڑی بننے سے کچھ دوررہ گئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔