ڈیوڈ وارنر ریٹائرمنٹ سے قبل ہندوستانی ٹیم کو ہندوستان میں شکست دینا چاہتے ہیں

آسٹریلیا نے ایم سی جی میں گھریلو ایشز سیریز کو 12 روز کے اندر 0-3 سے سمیٹنے کے بعد وارنر نے اشارہ دیا کہ ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا بند کرنے سے پہلے وہ اب بھی کچھ کرنا چاہتے ہیں۔

ڈیوڈ وارنر، تصویر آئی اے این ایس
ڈیوڈ وارنر، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

ملبورن: آسٹریلیا کے بائیں ہاتھ کے سلامی بلے باز ڈیوڈ وارنر نے واضح طور پر کہا کہ وہ اب بھی اپنے کیریئر کو جاری رکھنا چاہتے ہیں اور 2023 میں ایشز سیریز جیتنے کے بعد ہندوستان کی سرزمین پر ٹیم انڈیا کو شکست دینا چاہتے ہیں۔ وارنر ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے دوران آسٹریلیا کی جیت میں ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی رہے تھے۔ وہ اکتوبر میں 35 سال کے ہو گئے ہیں۔ انگلینڈ کے خلاف اگلی سیریز کے آغاز تک وہ 37 کے قریب پہنچ جائیں گے۔

آسٹریلیا نے ایم سی جی میں گھریلو ایشز سیریز کو 12 روز کے اندر تین۔صفر سے سمیٹنے کے بعد وارنر نے اشارہ دیا کہ ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا بند کرنے سے پہلے وہ ابھی بھی کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ وارنر نے کہا، ’’میرے کیریئر میں اب تک ہم نے ٹیم انڈیا کو ہندوستان میں نہیں ہرایا ہے۔ ایسا کرنا اچھا تجربہ ہوگا اور ظاہر ہے کہ انگلینڈ جانا اور انگلینڈ کو ہرانا بھی ایک ہدف ہوگا۔ 2019 میں، ہم نے ان کے یہاں جاکر سیریز کو ڈرا کیا تھا لیکن ایک اور مرتبہ موقع ملتا ہے تو میں وہاں ضرور کھیلنے جاؤں گا۔


وارنر نے انگلینڈ میں تین سیریز میں 13 ٹیسٹ اور ہندوستان کے دو دوروں میں آٹھ ٹیسٹ کھیلے ہیں لیکن آسٹریلیا نے ان پانچ میں سے چار سیریز میں شکست کا سامنا کیا ہے اور وارنر نے دونوں ممالک میں بغیر کسی سنچری کے بالترتیب 26 اور 24 رنز بنائے ہیں۔ واضح طور پر یہ ایک ایسا اعدادوشمار ہے جسے وارنر کو بہتر کرنا ہوگا۔

وہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اور اس سیریز کے پہلے تین ٹیسٹ میچوں میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرکے ان پر شبہ کرنے والوں کو خاموش کرانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ وہ اپنی عمر کو کسی رکاوٹ کے طور پر نہیں دیکھتے۔ وارنر نے کہا، "میرے خیال میں جیمز اینڈرسن ان دنوں بڑی عمر کے کھلاڑیوں کے لیے بنچ مارک سیٹ کر رہے ہیں، حالانکہ میرے لیے یہ اپنی بہترین صلاحیت کے مطابق کارکردگی دکھانے اور بورڈ پر رنز بنانے کے بارے میں ہے۔ پہلے دو ٹیسٹ میں، میں ایک مناسب بلے باز لگ رہا تھا۔ یہ الگ بات ہے کہ میں اس دوران سنچری نہیں بنا سکا۔ "میں اچھا محسوس کر رہا ہوں۔ جیسا کہ میں نے کہا، میں آؤٹ آف فارم نہیں تھا، اس لیے امید ہے کہ میں اس نئے سال میں زیادہ رنز بنا سکوں گا۔"

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔