محمد سراج اور جسپریت بمراہ پر آسٹریلیا میں ہوا نسلی تبصرہ، شکایت درج

کپتان اجنکیا رہانے اور آف اسپنر روی چندرن اشون کی سربراہی میں کچھ سینئر کھلاڑیوں نے سڈنی ٹیسٹ کے دونوں امپائروں پال رائفل اور پال ولسن کو سراج اور بمراہ پر ہوئے نسلی تبصرے سے آگاہ کیا ہے۔

محمد سراج اور جسپریت بمراہ، تصویر آئی اے این ایس
محمد سراج اور جسپریت بمراہ، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سڈنی: ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان تیسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز سڈنی میں کچھ شائقین نے ہندوستانی فاسٹ بالر جسپریت بمراہ اور محمد سراج پر نسلی تبصرے کیے جس کے بارے میں ہندوستانی ٹیم انتظامیہ نے شکایت درج کرائی ہے۔ رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ تیسرے دن کا کھیل ختم ہونے کے بعد ٹیم کے کپتان اجنکیا رہانے اور آف اسپنر روی چندرن اشون کی سربراہی میں کچھ سینئر کھلاڑیوں نے سڈنی ٹیسٹ کے دونوں امپائروں پال رائفل اور پال ولسن کو ان دونوں کھلاڑیوں پر نسلی تبصرے سے آگاہ کیا ہے کہ ان کے دو کھلاڑیوں پر نسلی تبصرے کیے گئے ہیں۔

بتایا جارہا ہے دونوں کھلاڑیوں کے ساتھ تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کچھ تماشائیوں نے اس طرح کا سلوک کیا تھا اور جب ایسا برتاؤ تیسرے دن بھی ہوا تو دونوں فاسٹ بالروں نے یہ شکایت درج کرائی۔ اس شکایت کے درج ہونے کے بعد امپائروں، سیکورٹی حکام اور ہندوستانی کھلاڑیوں کے مابین مجموعی طور پر پانچ منٹ تک بات چیت ہوئی اور ہندوستانی ٹیم ڈریسنگ روم کے قریب ہی رہی۔ ہندوستانی سیکورٹی حکام میدان میں موجود سیکورٹی اہلکاروں سے تقریباً پانچ منٹ تک بات چیت کرتے رہے اور اس دوران آئی سی سی کے سیکورٹی آفیسر بھی موجود تھے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next