تیسرا ٹیسٹ: ہندوستان 244 رنوں پر سمٹ گیا، آسٹریلیا نے کسا شکنجہ

ہندوستان کی نو وکٹیں 214 رنز پر گر گئیں، لیکن آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ نے ناٹ آؤٹ 28 رنز بنائے اور ہندوستان کو 244 رنز تک پہنچایا۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سڈنی: ہندوستانی ٹیم اپنے بلے بازوں کی مایوس کن کارکردگی کی وجہ سے آسٹریلیا کے خلاف تیسرے کرکٹ ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو پہلی اننگز میں 244 رنوں پر سمٹ کر سخت بحران سے دوچار ہوگئی ہے۔ آسٹریلیائی ٹیم کو پہلی اننگز میں 94 رنز کی اہم برتری حاصل ہوئی اور دوسری اننگز میں اسٹمپ تک دو وکٹ پر 103 رن بنا کر اپنی مجموعی برتری 197 پہنچا کر میچ پر اپنی گرفت مضبوط کرلی ہے۔

آسٹریلیائی ٹیم نے پہلی اننگز میں 338 رنز بنائے تھے جبکہ ہندوستان نے آج صبح دو وکٹوں پر 96 رنز سے آگے کھیلنا شروع کیا تھا لیکن پوری ٹیم 244 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔ چیتشور پجارا نے 50 رنز کی جدوجہد بھری اننگز کھیلی لیکن وہ اپنی اننگز کو زیادہ آگے نہیں لے جاسکے۔ گزشتہ میچ میں سنچری بنانے والے کپتان اجنکیا رہانے اس بار 22 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ وکٹ کیپر رشبھ پنت نے جدوجہد کرتے ہوئے 36 رنز بنائے تھے لیکن ان کے ہاتھ میں چوٹ لگنے کے بعد ان کی توجہ ختم ہوگئی اور وہ آؤٹ ہوگئے۔

واضح رہے کہ پجارا اور پنت دونوں نےگزشتہ آسٹریلیائی دورہ 2018-19 میں سڈنی میں کھیلے گئے میچ میں سنچریاں بنائیں، لیکن اس بار ہندوستانی بلے بازوں میں سے کوئی بھی بڑی اننگز نہیں کھیل سکے۔ ہندوستان کی نو وکٹیں 214 رنز پر گر گئیں، لیکن آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ نے ناٹ آؤٹ 28 رنز بنائے اور ہندوستان کو 244 رنز تک پہنچایا۔

ہندوستانی اننگ کو سمٹنے کے بعد آسٹریلیا کی دوسری اننگز کی ابتدا اچھی نہیں رہی۔ تیز گیند باز محمد سراج نے اپنا دوسرا ٹیسٹ کھیلتے ہوئے پہلی اننگز میں نصف سنچری بنانے والے ول پوکوسکی کو آؤٹ کیا۔ انہوں نے دو چوکوں کی مدد سے 16 گیندوں میں دس رنز بنائے۔ پہلی اننگز میں کوئی وکٹ نہ لینے والے آف اسپنر روی چندرن اشون نے جلد ہی کامیابی حاصل کی اور سلامی بلے باز ڈیوڈ وارنر کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کردیا۔ پہلی اننگز میں پانچ رنز بنانے والے وارنر دوسری اننگز میں کچھ نہ کرسکے اور 29 گیندوں میں صرف ایک چوکے کی مدد سے 13 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔آ

سٹریلیا کی دو وکٹیں 35 رن پر گر گئیں اور ہندوستان میچ میں واپسی کرتا ہوا نظر آرہا تھا، لیکن مارنس لیبس شین اور پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے اسٹیون اسمتھ کریز پر جم گئے اور آسٹریلیا کو اسٹمپ تک مزید نقصان نہیں ہونے دیا۔ دونوں نے تیسری وکٹ کی ناٹ آؤٹ شراکت داری میں 68 رنز کا اضافہ کیا اور آسٹریلیائی ٹیم کو 197 رنز کی برتری تک پہنچا دیا۔ آسٹریلیا چوتھے دن اس برتری کو مستحکم کرنے کی کوشش کرے گا تاکہ چوتھی اننگز میں ہندوستان پر دباؤ ڈالا جاسکے۔ تیسرے دن اسٹمپ پر لابوشین 69 گیندوں میں چھ چوکوں کی مدد سے47 رن اور پہلی اننگز میں131 رن بنانے والے اسمتھ 63 گیندوں پر تین چوکوں کی مدد سے 29 رنز بنا کر کریز پر موجود ہیں۔

ہندوستان نے ہفتے کو دووکٹ پر 96 رنوں سے آگے کھیلنا شروع کیا تھا جس کے بعد ان کی اننگز 244 رنزپر سمٹ گئی۔ ہندوستان کی جانب سے نوجوان اوپنر شبھمن گل نے 101 گیندوں کا سامنا کیا اور آٹھ چوکوں کی مدد سے 50 رنز بنائے اور تجربہ کار بلے باز چیتشور پجارا نے پانچ چوکوں کی مدد سے 176 گیندوں میں 50 رنز بنائے۔ آسٹریلیائی ٹیم نے اپنی پہلی اننگز میں اسٹار بلے باز اسٹیون اسمتھ (131) اور مارنس لیبس چین (91) کی شاندار نصف سنچری کی مدد سے 338 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں ہندوستان اپنی پہلی اننگز میں 100.4 اوورز میں 244 رنز ہی بناسکا، جس کے بعد آسٹریلیا کو اس میچ میں 94 رنز کی نمایاں برتری حاصل ہوگئی۔

اگرچہ ہندوستان لنچ سے پہلے اچھی پوزیشن میں تھا لیکن لنچ کے بعد ہندوستانی اننگز بری طرح لڑکھڑا گئی اور ٹیم آخری چھ وکٹ صرف 64 رنز پر گنوا بیٹھی۔ ہندوستانی کپتان اجنکیا رہانے نے 70 گیندوں کا سامنا کیا اور ایک چوکا اور ایک چھکے کی مدد سے 22 رنز بنائے اور وہ پیٹ کمنس کا شکار ہو گئے۔ اس کے علاوہ ہنوما وہاری نے صرف چار، وکٹ کیپر بلے باز رشبھ پنت 36، رویندر جڈیجا نے ناٹ آؤٹ 28، روی چندرن اشون 10، نویدیپ سینی نے تین ، جسپریت بمراہ صفر اور محمد سراج نے چھ رنز بنائے۔

آسٹریلیا کے خلاف اس ٹیسٹ سیریز میں ہندوستان کے لوکیش راہل، فاسٹ بولر امیش یادو، محمد شامی پہلے ہی انجری کی وجہ سے سیریز سے باہر ہوچکے ہیں اور پہلی اننگز میں وکٹ کیپر پنت کو بھی بیٹنگ کے دوران ایک گیند ہاتھ پر لگی جس کی وجہ سے ان کی جگہ ردھیمن ساہا کو میدان میں آنا پڑا۔ وہیں جڈیجہ کو بھی انگوٹھے پر باؤنسر لگ گئی جس کی وجہ سے وہ بھی بالنگ نہیں کرسکے۔ آسٹریلیا کی طرف سے کمنس نے عمدہ بولنگ کی، انہوں نے 21.4 اوورز میں 29 رن پر سب سے زیادہ چار وکٹیں حاصل کیں جبکہ جوش ہیزل ووڈ نے 21 اوورز میں دو وکٹیں حاصل کیں اور مچل اسٹارک نے ایک وکٹ حاصل کی۔ اس اننگز میں ہندوستانی ٹیم کے تین کھلاڑی بھی رن آؤٹ ہوئے جس کا خمیازہ ہندوستان کو بھگتنا پڑا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next