دسمبر میں تھوک افراط زر میں گزشتہ ماہ کے مقابلے قدرے کمی

تھوک قیمتوں پر مبنی افراط زر کی شرح دسمبر 2021 میں اس سے پچھلے ماہ کے مقابلے میں قدرے کم ہو کر 13.56 فیصد تک پہنچ گئی لیکن اب بھی یہ ایک سال پہلے اسی مہینے کے مقابلے بہت زیادہ ہے۔

علامتی فائل تصویر آئی اے این ایس
علامتی فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: ہندوستان میں تھوک قیمتوں پر مبنی افراط زر کی شرح دسمبر 2021 میں اس سے پچھلے ماہ کے مقابلے میں قدرے کم ہو کر 13.56 فیصد تک پہنچ گئی لیکن اب بھی یہ ایک سال پہلے اسی مہینے کے مقابلے بہت زیادہ ہے۔ نومبر 2021 میں تھوک قیمتوں پرمبنی افراط زر کی شرح 14.23 فیصد تھی، جبکہ دسمبر 2020 میں تھوک قیمتوں پرمبنی افراط زرکی شرح 1.95 فیصد پر تھی۔

جمعہ کو جاری سرکاری اعداد و شمار میں اکتوبر 21 کے تھوک زرمبادلہ کے اعداد و شمار پر نظرثانی کرتے ہوئے پہلے جاری 12.54 فیصد کی جگہ 13.83 فیصد کر دیے ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق معدنی تیل، قدرتی گیس، بنیادی دھاتیں، کیمیائی مصنوعات، خوردنی اشیا، ٹیکسٹائل، کاغذ اور کاغذ کے سامان وغیرہ کی تھوک قیمتیں ایک سال پہلے سے سالانہ بنیاد پردسمبر 21 کی ڈبلیو پی آئی کی سطح بلند رہی۔


وزارت برائے تجارت اور صنعت کے ایک بیان کے مطابق دسمبر 21 میں تیار شدہ اشیاء کی تھوک زر مبادلہ کی شرح ایک ماہ پہلے کے مقابلے میں کم ہو کر 10.62 فیصد رہ گئی۔ گزشتہ نومبر میں یہ 11.92 فیصد تھی۔ اسی طرح ایندھن اور بجلی کے شعبے تھوک قیمت میں اضافے کی سالانہ شرح دسمبر میں 32.30 فیصد تھی جو نومبر میں 39.81 فیصد کے مقابلے میں کم ہے۔ دسمبر 21 میں بنیادی اشیاء کی تھوک قیمتوں پر مبنی زرمبادلہ کی شرح 13.38 فیصد پر پہنچ گئی جو نومبر 21 میں 10.34 فیصد تھی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔