حکومت ہندوستان کو فروخت کرنے پر آمادہ: کانگریس

کانگریس رہنما کے سی وینوگوپال نے کہا، ’’وہ کہتے ہیں کہ ہم منافع بخش پی ایس یوز کو نہیں بیچ رہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ وہ صرف اور صرف منافع بخش کمپنیوں کو ہی فروخت کر رہے ہیں‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس نے جمعرات کو بی جے پی کی زیر قیادت مرکزی حکومت کی جانب سے منافع بخش عوامی کاروباری اداروں کو فروخت کرنے کے حوالہ سے حملہ بولا اور کہا کہ مودی حکومت منافع بخش اداروں کے ساتھ ملک کو بھی فروخت کرنے پر آمادہ ہے۔ کانگریس کے جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال نے خبررساں ایجنسی آئی اے این ایس سے کہا، ’’یہ حکومت ہندوستان کو مکمل طور پر بیچنے جا رہی ہے۔‘‘

مرکز میں نریندر مودی کی زیر قیادت حکومت پر حملہ بولتے ہوئے کانگریس رہنما نے کہا، وہ کہتے ہیں کہ ہم منافع بخش پی ایس یوز کو نہیں بیچ رہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ وہ صرف اور صرف منافع بخش کمپنیوں کو ہی فروخت کر رہے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ حکومت کے قول اور فعل میں تضاد ہے۔‘‘

وینوگوپال نے مزید کہا، ’’ایک طرف وہ قومیت اور میک ان انڈیا کی بات کرتے ہیں جبکہ دوسری طرف وہ تمام منافع بخش عوامی کاروباری اداروں کو فروخت کر رہے ہیں۔‘‘ انہوں نے کہا کہ کانگریس یقینی طور پر پارلیمنٹ میں اس مسئلے کو اٹھائے گی۔

کانگریس کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب حکومت نے پانچ پی ایس یوز (عوامی کاروباری ادارے) میں 31 فیصد حصص کو فروخت کرنے کا اعلان کیا ہے۔ حکومت جن عوامی شعبوں کو بیچنے کی تیاری کر رہی ہے ان کمپنیوں میں تیل کمپنی ’بھارت پٹرولیم کارپوریشن لمیٹڈ (بی پی سی ایل) ، شپنگ کارپوریشن آف انڈیا اور کنٹینر کارپوریشن آف انڈیا (کانکور) شامل ہیں۔

Published: 21 Nov 2019, 2:30 PM