چینی فون کمپنی ’ویوو‘ کے 44 ٹھکانوں پر ای ڈی کے چھاپے

انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے چینی موبائل فون بنانے والی کمپنی ویوو اور اس سے متعلقہ کمپنیوں اور ذیلی اداروں کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا ہے، اسی کے سلسلہ میں چھاپہ ماری کی گئی۔

علامتی تصویر، ای ڈی
علامتی تصویر، ای ڈی
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے منگل کے روز فون تیار کرنے والی چینی کمپنی ’ویوو‘ کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ملک بھر میں چھاپہ ماری کی۔ رپورٹ کے مطابق ای ڈی نے یوپی، بہار، مدھیہ پردیش اور جنوبی ہندوستان کی ریاستوں میں 44 مقامات پر چھاپے مارے۔

انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے چینی موبائل فون بنانے والی کمپنی ویوو اور اس سے متعلقہ کمپنیوں اور ذیلی اداروں کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا ہے۔ ای ڈی نے ایک ایف آئی آر کا نوٹس لیتے ہوئے منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا ہے۔ سی بی آئی پہلے ہی اس معاملے میں تحقیقات کر رہی ہے۔


گزشتہ دسمبر میں محکمہ انکم ٹیکس نے بھی ویوو اور دیگر چینی موبائل فون بنانے والی کمپنیوں کے ٹھکانوں پر چھاپہ ماری کی تھی۔ محکمہ انکم ٹیکس نے الزام لگایا تھا کہ 500 کروڑ روپے سے زیادہ کی آمدنی کا غلط اعلان کیا گیا ہے۔ الزام ہے کہ رائلٹی کے نام پر رقم کا غلط استعمال کیا جا رہا ہے۔

خیال رہے کہ ای ڈی نے فیما کے ایک معاملہ میں شیومی کے سابق ہندوستانی سربراہ منو جین سے بھی پوچھ گچھ کی تھی۔ اس کے بعد ای ڈی نے شیومی کے 5000 کروڑ روپے کے بینک اکاؤنٹس کو منجمد کر دیا، جس پر کرناٹک ہائی کورٹ نے حکم امتناعی جاری کر دیا۔ شیومی نے دعویٰ کیا کہ ای ڈی نے اس کے اعلیٰ عہدیداروں کو مجبور کیا، تاہم تفتیشی ایجنسی نے ان الزامات کی تردید کی تھی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔