ووڈا فون-آئیڈیا کو ریکارڈ 73 ہزار کروڑ کا خسارہ، 11 کروڑ سے زیادہ گاہکوں نے ساتھ چھوڑا

پچھلے مالی سال میں اس عرصے کے دوران یہ خسارہ 4881.9 کروڑ روپے کا تھا۔ مارچ 2020 کے سہ ماہی کے دوران کمپنی کی آپریشن آمدنی 11754.2 کروڑ روپے رہی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: ملک کی دوسری سب سے بڑی ٹیلی کام کمپنی ووڈا فون- آئیڈیا کو ہندوستانی کارپوریٹ کی تاریخ میں سب سے زیادہ 73878.1 کروڑ روپے کا خسارہ ہوا ہے۔ کمپنی نے بدھ کے روز شیئر بازاروں کو بھیجے گئے 2019-20 کے نتائج میں یہ اطلاع دی ہے۔ مالی سال میں کسی بھی ہندوستانی کمپنی کا یہ اب تک کا سب سے بڑا نقصان ہے۔

ووڈ افون- آئیڈیا نے سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق قانونی واجبات کی ادائے گی کو اتنی بڑی رقم کے خسارے کی وجہ بتائی ہے۔ غیر مواصلاتی آمدنی کو بھی سپریم کورٹ کے حکم کے تحت قانونی واجبات کے حساب کتاب میں شمار کرنا تھا، جس کی بنیاد پر کمپنی کو حکومت کو 51400 کروڑ روپئے ادا کرنے ہیں۔

مارچ 2020 کو ختم ہونے والی سہ ماہی میں کمپنی کو 11643.5 کروڑ روپے کا خسارہ ہوا۔ پچھلے مالی سال میں اس عرصے کے دوران یہ خسارہ 4881.9 کروڑ روپے کا تھا۔ مارچ 2020 کے سہ ماہی کے دوران کمپنی کی آپریشن آمدنی 11754.2 کروڑ روپے رہی۔ قابل ذکر ہے کہ مالی سال 2018-19 میں ووڈا فون- آئیڈیا کو 14603.9 کروڑ روپے کا نقصان ہوا تھا۔

ووڈا فون آئیڈیا کا بحران کتنا شدید ہے اسے اس طرح سمجھ سکتے ہیں کہ گزشتہ دو سالوں سے بھی کم مدت میں کمپنی نے 11.61 کروڑ گاہک کھو دیئے ہیں۔ فی الحال کمپنی کے 32.5 کروڑ صافین ہیں اور یہ جیو اور ایئرٹیل کے بعد ہندوستان کی تیسری سب سے بڑی کمپنی ہے۔ اس مدت میں جہاں ووڈ افون آئیڈیا لگاتار کمزور ہوتی چلی گئی، وہیں دوسری طرف ریلائنس جیو نے اپنے صارفین میں زبردست اضافہ کیا ہے۔ ادھر ایئرٹیل کو بھی بازار میں اپنی حصہ داری بنائے رکھنے میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔