لاک ڈاؤن کے دوران دہلی میٹرو کو ایک ہزار کروڑ کا خسارہ

یکم اگست سے ان لاک 3 کے لئے رہنما ہدایات جاری ہونے والی ہیں اور یہ کہا جا رہا ہے کہ یکم اگست سے سنیما ہال اور جم کھولے جانے کے امکان ہیں۔ لیکن حکومت ابھی اسکول اور میٹرو ریل کھولنے کے حق میں نہیں ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

عمران

دہلی میٹرو انتظامیہ اس انتظار میں ہے کہ کب سے دہلی میں میٹرو خدمات شروع ہوں گی کیونکہ کورونا وائرس کی وجہ سے میٹرو خدمات مارچ سے بند ہیں، جس کی وجہ سے دہلی میٹرو کو تقریباً ایک ہزار کروڑ روپے کا نقصان ہوچکا ہے۔

منی کنٹرول میں شائع خبر کے مطابق دہلی میٹرو ریل کارپوریشن یعنی ڈی ایم آر سی کے ذرائع نے بتایا کہ دہلی میٹرو دس کروڑ روپے یومیہ کماتی ہے اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہونے والا نقصان ایک ہزار کروڑ روپے تک پہنچ گیا ہے۔ دہلی میٹرو کے پاس کل 300 ٹرینیں ہیں، جس میں روزانہ 18 لاکھ مسافر سفر کرتے ہیں۔ آٹھ لائنوں پر چلنے والی میٹرو آنے جانے کے پانچ ہزار چکر لگاتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دہلی میٹرو کو صرف ٹرینیں چلنے سے نقصان نہیں ہورہا ہے بلکہ کمرشل اور دیگر ذرائع سے بھی آمدنی کا نقصان ہو رہا ہے۔ یکم اگست سے ان لاک 3 کے لئے رہنما ہدایات جاری ہونے والی ہیں اور یہ کہا جا رہا ہے کہ یکم اگست سے سنیما ہال اور جم کھولے جانے کے امکان ہیں۔ ساتھ میں یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ حکومت ابھی اسکول اور میٹرو کھولنے کے حق میں نہیں ہے۔ اب میٹرو کے اوپر یہ دباؤ ہے کہ وہ اس نقصان کی بھرپائی کیسے کرے گی۔

Published: 28 Jul 2020, 8:11 PM
next