’ملکہ حسن‘ مدھوبالا کو گوگل کا ڈوڈل بنا کر خراج عقیدت

مدھوبالا کی بچپن سے سنیما میں کام کرنے کی تمنا رہی تھی اور 1942 میں ان کی پہلی فلم بسنت ریلیز ہوئی۔ 1947 میں جب انہوں نے نیل کمل میں راج کپور کے ساتھ کام کیا تب وہ صرف 14سال کی تھیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ہندی فلموں کی خوبصورت ترین اداکار مدھوبالا کی 86ویں سالگرہ پر گوگل نےانہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کا ڈوڈل تیارکیا ہے۔ مدھوبالا محض 14سال کی عمرمیں راج کپور کی ہیروئین بن گئیں اور دوعشروں تک ہندی فلمی دنیا پر راج کرنے والی اداکارہ کے دل میں سوراخ تھا، جو ایک سچی محبت کی تلاش میں وقت سے پہلے ہی دنیا سے رخصت ہو گئیں، جس کی کہانی انتہائی درد بھری ہے۔

مدھوبالا یوم عشاق یعنی ویلنٹائن ڈے کے موقع پر14فروری1933 کو دہلی میں پیدا ہوئیں۔ ان کا نام ممتازجہاں دہلوی تھا، وہ بالی ووڈ کی ایک ایسی فنکارہ تھیں جوکہ مکمل طورسے سنیما کے رنگ میں رنگ گئیں اور اپنی ساری زندگی اسی کے نام وقف کردی۔ ان کے والدعطاء اللہ خان اور والدہ عائشہ بیگم کا تعلق پشاور (پاکستان کا شہر) سے تھا۔ ان کے والد ایک تمباکو کمپنی میں برسر روزگار تھے۔ ملازمت ترک کرکے عطاء اللہ دہلی اور پھر بمبئی سکونت اختیار کی۔

مدھوبالاکی بچپن سے سنیما میں کام کرنے کی تمنا رہی تھی اور 1942 میں ان کی پہلی فلم بسنت ریلیز ہوئی۔ 1947 میں جب انہوں نےنیل کمل میں راج کپور کے ساتھ کام کیا تب وہ صرف 14سال کی تھیں۔ یہ فلم کامیاب رہی اور اس زمانہ کی معروف اداکارہ دیویکا رانی نے ان کا فلمی نام مدھوبالا رکھنے کا مشورہ دیا۔ نیل کمل ممتاز کے نام سے ان کی آخری فلم تھی۔ اس فلم کے بعد انہیں خوبصورت دیوی کہا جانے لگا، پھر دوسال بعد انہوں نے مشہور فلمساز کمال امروہی کی فلم محل میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ بمبئی ٹاکیز کی اس فلم کے ہٹ ہونے کے بعد انہوں نے پیچھے مڑکر نہیں دیکھا اور بمبئی کی فلمی صنعت میں وہ قدآور ہو گئیں۔

next