راج کندرا نے فائیو اسٹار ہوٹلوں میں بنائیں فحش فلمیں

بالی ووڈ اداکارہ شلپا شیٹی کے شوہر اور بزنس مین راج کندرا اور دیگر پر کچھ ڈیلکس ہوٹلوں میں فحش مواد تیار کرنے کا الزام ہے، جنہیں او ٹی ٹی پلیٹ فارمز نے مالی فائدہ کے لیے تقسیم کیا تھا۔

راج کندرا / آئی اے این ایس
راج کندرا / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بالی ووڈ اداکارہ شلپا شیٹی کے شوہر اور بزنس مین راج کندرا اور دیگر پر کچھ ڈیلکس ہوٹلوں میں فحش مواد تیار کرنے کا الزام ہے، جنہیں او ٹی ٹی پلیٹ فارمز پر مالی فائدہ کے لیے تقسیم کیا گیا تھا۔ مہاراشٹر سائبر پولیس نے یہ جانکاری دی۔ گزشتہ ہفتے عدالت میں داخل کی گئی، سائبر پولیس کی چارج شیٹ کے مطابق راج کندرا نے ماڈل شرلین چوپڑا اور پونم پانڈے، فلم پروڈیوسر میتا جھنجھن والا اور کیمرہ مین راجو دوبے کے ساتھ فائیو اسٹار ہوٹلوں میں فحش ویڈیوز شوٹ کیں۔

اس سے پہلے اپریل 2021 میں، ممبئی پولیس کی کرائم برانچ نے اپنی الگ چارج شیٹ داخل کی تھی، اس کے بعد ستمبر میں اس معاملے میں ایک ضمنی چارج شیٹ داخل کی گئی، جو فروری (2021) میں مدھ آئی لینڈ کے بنگلے پر چھاپے کے بعد سامنے آئی تھی۔ سائبر پولیس، جس نے 2019 میں کیس درج کیا تھا، نے دعویٰ کیا ہے کہ آرمس پرائم میڈیا لمیٹڈ کے ڈائریکٹر راج کندرا کچھ ویب سائٹس پر فحش ویڈیوز بنانے اور تقسیم کرنے میں ملوث تھے۔


450 صفحات پر مشتمل چارج شیٹ میں 'بنانا پرائم او ٹی ٹی' کے سواجیت چودھری اور راج کندرا کے عملہ کے رکن امیش کامتھ و دیگر کا نام فحش مواد بنانے والی ایک ویب سیریز 'پریم پگلانی' کو بنانے اور او ٹی ٹی پع اپ لوڈ کرنے کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔ پانڈے پر اپنا خود کا موبائل ایپ 'دی پونم پانڈے' تیار کرنے، کندرا کی کمپنی کی مدد سے ویڈیو کی شوٹنگ، اپ لوڈ اور تقسیم کرنے کا بھی الزام ہے۔

سائبر پولیس کے مطابق، دوبے نے چوپڑا کے ویڈیوز بھی شوٹ کیے تھے، جب کہ جھنجھن والا پر چوپڑا کے لئے اسکرپٹ لکھنے اور ہدایت کاری میں مدد اور حوصلہ افزائی کرنے کا الزام ہے۔ سائبر پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ کندرا کی کمپنی نے اس جرم میں مدد کی اور اس کی حوصلہ افزائی کی۔ اور اس نے دوسرے تمام شریک ملزمان سے مالی فائدہ اٹھایا حالانکہ وہ جانتے تھے کہ ایسی چیزیں غیر قانونی ہیں، یہاں تک کہ سائبر پولیس کو کچھ دیگر لاپتہ ماڈلز کی تلاش ہے جنہوں نے فحش ویڈیوز یا ویب سیریز میں کام کیا ہے۔


ممبئی پولیس کی کرائم برانچ نے ہائی پروفائل کیس کا پردہ فاش کرنے کے بعد، جس میں کئی ملزمان کو گرفتار کیا گیا تھا، راج کندرا کو ستمبر 2021 میں ضمانت ملنے سے پہلے دو ماہ کی حراست میں بھیج دیا گیا تھا۔ دیگر ملزمان میں کندرا کی فرم ویان انٹرپرائزز کے آئی ٹی سربراہ ریان تھورپے، سنگاپور میں مقیم یش ٹھاکر عرف اروند سریواستو اور لندن میں مقیم کندرا کے بہنوئی پردیپ بخشی شامل ہیں، جو کینرین اور ہاٹ شاٹ کمپنیاں چلاتے ہیں۔

ممبئی پولیس، جس نے راج کندرا پر تقریباً 100 فحش فلمیں بنانے کا الزام لگایا تھا، نے ٹھاکر کے 6.50 کروڑ روپے کے بینک اکاؤنٹس کو بھی منجمد کر دیا تھا۔ ستمبر 2021 میں داخل ضمنی چارج شیٹ کے مطابق، کیس میں 43 گواہوں کے بیانات ریکارڈ کیے گئے ہیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;