اسرائیل نے غزہ پر بمباری کر کے مزید تین صحافی جاں بحق  کر دیے: حماس

اسرائیل نے جمعہ کے روز جنگی وقفے میں خاتمے کے ساتھ ہی اپنی جنگ کے دوسرے مرحلے کا آغاز کرتے ہوئے غزہ پر آگ اور بارود کی بارش شروع کر دی۔

<div class="paragraphs"><p>فائل تصویر آئی اے این ایس&nbsp;</p></div>

فائل تصویر آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

غزہ میں حماس کے زیر قیادت قائم حکومت نے اطلاع دی ہے کہ جمعہ کے روز اسرائیلی بمباری میں تین صحافی جاں بحق  ہو گئے ہیں۔ صحافیوں کی ہلاکت کے یہ واقعات جنگی وقفوں کے ختم ہونے کے بعد غزہ پر نئی اسرائیلی بمباری کے دوران ہوئی۔

اسرائیل نے جمعہ کے روز جنگی وقفے میں خاتمے کے ساتھ ہی اپنی جنگ کے دوسرے مرحلے کا آغاز کرتے ہوئے غزہ پر آگ اور بارود کی بارش شروع کر دی۔


حکومتی اطلاعات کے دفتر نے بتایا ہے کہ ہلاک ہونے والے تینوں صحافی غزہ میں بطور کیمرہ مین کام کر رہے تھے۔منتصر الصواف، ان کے بھائی مروان اور عبداللہ درویش ترکیہ کے خبر رساں ادارے اناضول کے ساتھ وابستہ تھے۔ واضح رہے اب تک 73 صحافی اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں جاں بحق ہو گئے ہیں۔

ترکیہ کی ایجنسی نے تینوں صحافیوں منتصر الصواف، مروان اور عبداللہ کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔ اناضول کے جنرل ڈائریکٹر سردار کاراگوز نے کہا ہمیں انتہائی مشکل حالات میں اپنی ذمہ داریوں کو ادا کرنے والے اپنے ساتھیوں کی زندگی کی فکر ہے۔ ہم حملے کرنے والوں کے احتساب تک اپنی جدودجہد جاری رکھیں گے۔


وزارت صحت نے بتایا کہ جمعہ کے روز جنگی وقفے کے خاتمے کے ساتھ ہی اسرائیل نے غزہ پر بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں 178 فلسطینی ہلاک ہوئے ہیں۔ (بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ)

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;