کویت نے کیا دوسرے ممالک میں پھنسے 80 ہزار گھریلو ملازمین کی مرحلہ وار واپسی کا اعلان

کویت پیر سے تقریباً 80000 گھریلو ملازمین کی واپسی کی تیاری کر رہا ہے۔ ان میں سے بیشتر ایسے ممالک میں پھنسے ہوئے تھے جن کی پروازیں کرونا وبا کی وجہ سے بند کردی گئیں تھیں۔

تصویر العربیہ ڈاٹ نیٹ
تصویر العربیہ ڈاٹ نیٹ
user

قومی آوازبیورو

کویت: خلیجی ریاست کویت نے بیرون ملک 'کووڈ 19' کی وجہ سے فضائی سروسز بندش کے نتیجے میں پھنس جانے والے گھریلو ملازمین کو مرحلہ وار واپس لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ خبر رساں اداروں کے مطابق کویت اگلے سوموار سے تقریباً 80000 گھریلو ملازمین کی واپسی کی تیاری کر رہا ہے۔ ان میں سے بیشتر ایسے ممالک میں پھنسے ہوئے تھے جن کے ساتھ ہی کرونا وبا کی وجہ سے پروازیں بند کردی گئیں تھیں۔

اگرچہ کویت نے تجارتی ہوا بازی کی بحالی کے پہلے مرحلے کا آغاز یکم اگست سے کیا تھا مگر رواں سال مارچ کو بند کی گئی پروازیں اب بھی ان 34 ممالک کے ساتھ عملی طور پر معطل ہیں۔ کویت کے خیال میں ان ملکوں میں کرونا کے خطرات اور اثرات اب بھی موجود ہیں۔

پچھلے مہینوں کے دوران پروازوں کی معطلی کے باعث ان ممالک کے بہت سے کارکنوں کو کسی تیسرے ملک کے راستے کویت آنے پر مجبور کیا گیا جہاں مسافر کویت میں داخلے کی اجازت سے پہلے کم از کم 14 دن قرنطینہ میں گزارنا لازمی ہے۔ اس سے ان مزدوروں اور ان کے لواحقین کے اہل خانہ کو بھاری اخراجات اٹھانا پڑتے تھے۔

اس تناظر میں کویت کی سول ایوی ایشن کے ترجمان سعد محمد العتیبی نے منگل کو ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ بیرون ملک سے گھریلو ملازمین کی واپسی کے منصوبے کی کامیابی ابتدائی مرحلہ ہو گی۔ براہ راست پروازیں کویت ایئرویز اور جزیرا ایئر ویز کے ذریعہ ان ممالک کے درمیان چلائی جائیں گی جن میں گھریلو ملازمین موجود ہیں۔ پہلے مرحلے میں ہندوستان اور فلپائن شامل ہوں گے اور اس کے بعد دوسرے مرحلے کا آغاز کیا جائے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔